ہائیکورٹ کا باپ کے قتل میں سزائے موت پانے والے مجرم کو بری کرنے کا حکم

ہائیکورٹ کا باپ کے قتل میں سزائے موت پانے والے مجرم کو بری کرنے کا حکم

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ کے دورکنی بنچ نے باپ کے قتل میں سزائے موت پانے والے مجرم کو بری کرنے کا حکم دے دیا۔مسٹر جسٹس مظاہرعلی اکبرنقوی اور مسٹر جسٹس سیدشہبازعلی رضوی پر مشتمل دورکنی بنچ نے صہیب مہر کی اپیل پر سماعت کی، اپیل کنندہ کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ صدر اوکاڑہ پولیس نے 2010میں حقیقی باپ جاوید کو قتل کرنے کے الزام میں اپیل کنندہ کی والدہ طاہرہ پروین کی درخواست پر مقدمہ درج کیا، ٹرائل کورٹ اوکاڑہ نے ناکافی شواہد اور ناقص تفتیش کے باوجود 13اپریل 2011کو سزائے موت کا حکم سنایا ہے ، وہ اپنے باپ کے قتل میں ملوث نہیں ،عدالت نے فریقین کے دلائل سننے اور ریکارڈ دیکھنے کے بعد مجرم ٹرائل کورٹ کا حکم کالعدم کرتے ہوئے بری کرنے کا حکم دے دیا۔

مزید : علاقائی