بچوں کی کم عمری میں شادی کروانے پر سزائیں بڑھا دی گئیں

بچوں کی کم عمری میں شادی کروانے پر سزائیں بڑھا دی گئیں
بچوں کی کم عمری میں شادی کروانے پر سزائیں بڑھا دی گئیں

  


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)پنجاب سمبلی میں کم عمری میں بچوں کی شادی کیخلاف ترمیمی بل اکثریتی رائے سے منظور کر لیا گیاہے ۔تفصیلات پنجاب اسمبلی میں ایک ہی روز میں 11بل منظور کر کے قانون سازی کا ریکارڈ بنا لیا گیاہے ،پاس کیے جانے والے بلوں میں سے پانچ بل خواتین سے متعلق ہیں کیوں کہ آٹھ مارچ کو خواتین کا عالمی دن منایا جائے گا جس کے باعث خواتین کو خود مختار بنانے کے لیے بل پاس کیے گئے ہیں جن میں سے ایک بل بچوں کی کم عمری میں شادی کیخلاف پیش کیا گیا جسے اکثریتی رائے سے منظور کر تے ہوئے بچی کے سرپرست اور نکاح خواں کی سزا ایک ماہ سے بڑھا کر چھ ماہ کر دی گئی ہے ۔بچوں کی کم عمر میں شادی کروانے کے کلچر کو روکنے کے لیے پنجاب اسمبلی میں سخت اقدامات اٹھائے جار ہے ہیں او ر اس سلسلے میں ترمیمی بل میں جرمانہ بھی بڑھا کر ایک ہزار سے پچاس ہزار کر دیا گیاہے ۔

ماہرین کاکہناہے کہ سزاوٗں میں اضافے سے معصوم بچیوں کو شادی کی بھینٹ چڑھانے والے کسی بھی  ایسی سرگرمی سے پہلے سوچنے پر ضرور مجبور ہوں گے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں