زرداری اور ذوالفقار مرزا کے اختلافات کی وجہ سامنے آگئی

زرداری اور ذوالفقار مرزا کے اختلافات کی وجہ سامنے آگئی
زرداری اور ذوالفقار مرزا کے اختلافات کی وجہ سامنے آگئی

  


حیدر آباد (ویب ڈیسک) سابق صوبائی وزیر داخلہ ڈاکٹر ذوالفقار مرزا نے پیپلزپارٹی کے ناراض رہنماﺅں اور بینظیر بھٹو شہید کے وفادار ساتھیوں جنہیں اب نظر انداز کردیا گیا ہے سے رابطے شروع کردئیے ہیں جبکہ خود آصف علی زرداری نے ذوالفقار مرزا کی نقل و حرکت پر نظر رکھنے کیلئے پارٹی کے رہنماﺅں کو خصوصی ہدایات دی ہیں۔ مقامی اخبار روزنامہ نئی بات کے مطابق ڈاکٹر ذوالفقار مرزا اور آصف علی زرداری کے درمیان اختلافات کی وجہ اثاثوں کے معاملات ہیں۔ کچھ عرصے قبل بھی ڈاکٹر ذوالفقار مرزا نے ایم کیو ایم اور سابقہ وزیر داخلہ رحمن ملک کو آڑے ہاتھوں لیا تھا جس کے بعد رابطہ کاروں نے ڈاکٹر ذوالفقار مرزا اور آصف علی زرداری کے درمیان دوبارہ رابطے استوار کرادئیے تھے اور آصف علی زرداری نے ذوالفقار مرزا کے صاحبزادے رکن صوبائی اسمبلی حسنین مرزا کو وزیر بنانے کی یقین دہانی بھی کرائی تھی لیکن حسنین مرزا کو صوبائی وزیر نہیں بنایا گیا جس پر ڈاکٹر ذوالفقار مرزا ناراض ہوگئے تھے، جس پر رابطہ کاروں نے پھر سیز فائر کروایا اورڈاکٹر ذوالفقار مرزا کو سینیٹر بنوانے کی یقین دہانی بھی کروائی لیکن سینیٹ کے انتخابات کے وقت ڈاکٹر ذوالفقار مرزا کو پھر نظر انداز کردیا گیا جس پر وہ اب براہ راست آصف علی زرداری کے بھی مخالف ہوگئے اور اعلانیہ طور پر ان کی مخالفت کررہے ہیں۔

 اخبار کے مطابق پیپلزپارٹی سے تعلق رکھنے والے سینئر عہدیدار جو بینظیر بھٹو کے قریبی ساتھی سمجھے جاتے تھے انہیں اب پارٹی قیادت نے مکمل طور پر نظر انداز کیا ہوا ہے ان سے بھی ڈاکٹر ذوالفقار مرزا نے اپنے ساتھیوں کے ذریعے رابطے استوار کرنا شروع کردئیے ہیں۔ ادھر ڈاکٹر ذوالفقار مرزا سندھ میں مختلف قوم پرست تنظیموں کے قائدین سے بھی رابطے کررہے ہیں لیکن قوم پرست حلقے انہیں خاص اہمیت نہیں دے رہے کیونکہ ماضی میں ذوالفقار مرزا جب وزیر داخلہ تھے سندھ کے قوم پرستوں کو براہ راست دھمکیاں دیتے رہے۔

مزید : حیدرآباد