وزیر اعظم کیخلاف تقریر کرنیوالے خطیب کی درخواست ضمانت پر ریکارڈ طلب

وزیر اعظم کیخلاف تقریر کرنیوالے خطیب کی درخواست ضمانت پر ریکارڈ طلب

  

لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت نے وزیر اعظم عمران خان کے خلاف تقریر کرنے والے مسجد کے خطیب کی جانب سے دائردرخواست ضمانت پر پولیس سے مقدمہ کا ریکارڈ طلب کر لیاہے۔ایڈیشنل سیشن جج محمد ظفر اقبال نے کیس کی سماعت کی ،ملزم عبدالرؤف نے پنے وکیل کی وساطت سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا کہ اس ملک میں اب وزیر اعظم کا نام لینا بھی جرم بن گیا ہے ،یہ لاؤڈ سپیکر کے غیر ذمہ دارانہ استعمال کا معاملہ تھا مگر پولیس نے مقدمہ میں پیکا ایکٹ کی دفعات بھی شامل کر دیں تاکہ ملزم کی ضمانت ہی نہ ہی سکے ،پیکا ایکٹ کی دفعات کسی قابل اعتراض ویڈیو مواد کے سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کرنے پر لگایا جاتا ہے پولیس نے مسجدمیں تقریر پر پیکا ایکٹ لگا دیا ہے ،اسی طرح پیکا ایکٹ کے تحت صرف ایف آئی اے کارروائی کر سکتی ہے ،پولیس کو اس کااختیار حاصل نہیں ہے ،عدالت نے ملتان پولیس سے 8 مارچ تک مقدمہ کا ریکارڈ طلب کر لیاہے۔واضح رہے کہ ملزم عبدالرؤف کے خلاف ملتان پولیس نے مقدمہ درج کررکھاہے، چونکہ مقدمہ میں پیکا ایکٹ کی دفعات شامل تھِی اس وجہ سے کیس کی سماعت لاہور میں ہے کیونکہ پیکا ایکٹ کی عدالت صرف لاہور میں ہے ۔

ریکارڈ طلب

مزید :

علاقائی -