کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی تیز ، مولانا مسعود اظہر کے بیٹے اور بھائی سمیت 44افراد کو حراست میں لے لیا گیا

کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی تیز ، مولانا مسعود اظہر کے بیٹے اور بھائی ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ، مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں ) حکومت نے کالعدم تنظیموں کے 44 ارکان کو حراست میں لے لیا۔وزارتِ داخلہ کے مطابق حراست میں لیے گئے افراد میں مفتی عبدالرؤف اور مولانا مسعود اطہر کے بیٹے مولاناحماد اظہار بھی شامل ہیں۔وزارتِ داخلہ کا کہنا ہے کہ یہ تمام اقدامات نیشنل ایکشن پلان کے تحت لیے گئے اور حراست میں لیے گئے مفتی عبدالرؤف کالعدم جیشِ محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر کے بھائی ہیں۔دوسری جانب اسلام آباد میں وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی اور سیکریٹری داخلہ نے اس حوالے سے مشترکہ پریس کانفرنس کی۔سیکریٹری داخلہ نے کہا کہ تمام کالعدم تنظیموں کے خلاف ایکشن تیز کرنے کا فیصلہ ہوا ہے، کسی ایک یا دو کے خلاف نہیں بلکہ بلا تفریق تمام کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے، نیشنل ایکشن پلان پر بھرپور عمل کیا جائے گا، پہلے مرحلے میں 44 افراد کو حفاظتی تحویل میں لیا گیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ مفتی عبدالرؤف اور حماد اظہر کے نام بھارت کے ڈوزیئر میں شامل ہیں، جن افراد کو حراست میں لیا گیا ان سے تفتیش کی جائے گی، بھارت کے ڈوزیئر میں کچھ چیزوں کا ذکر ہے شواہد نہیں، ہمارے پاس شواہد نہیں لیکن کچھ لوگوں کو حفاظتی تحویل میں لیا گیا ہے۔سیکریٹری داخلہ نے مزید کہا کہ ڈوزیئر میں جن کے نام ہیں ان کے بارے میں وزارت خارجہ کے توسط سے بھارت سے شواہد مانگے ہیں، حفاظتی تحویل میں لیے گئے افراد کے خلاف تحقیقات کی جا رہی ہیں، ثبوت ملے تو مزید کارروائی ہوگی اور اگر ثبوت نہ ملے تو حراست میں لیے گئے افراد کی نظر بندی ختم کردی جائیگی۔اس موقع پر وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے کہا کہ کالعدم تنظیموں کے خلاف بلا تفریق کارروائی ہورہی ہے، ہم کسی دباؤ میں یہ کارروائی نہیں کررہے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی سرزمین کسی کے خلاف استعمال نہیں ہونے دیں گے، کوئی بھی قوت پاکستان کے نجی معاملات میں مداخت نہیں کر سکے گی، پیشگی اقدام کے تحت اپنی ذمہ داری ادا کررہے ہیں، کسی دباؤ کے تحت نہیں۔دریں اثناحکومت پاکستان نے کالعدم جماعتوں کی باقاعدہ فہرست جاری کردی ۔فہرست متعلقہ وفاقی ادروں اورصوبائی حکومتوں کوارسال کردی گئی ،پاکستان میں 68جماعتوں کوکالعدم قراردیدیاگیا جبکہ جماعت الدعوہ اورفلاح انسانیت فاؤنڈیشن سمیت 4جماعتوں کو واچ لسٹ میں رکھاگیاہے سرکاری دستاویزات کے مطابق نیکٹانے وفاقی وزارت داخلہ کے نوٹیفیکیشن کے کی روشنی میں کالعدم جماعتوں کی لسٹ جاری کی ہے جس میں 68جماعتوں کوکالعدم قراردیاہے کالعدم جماعتوں کی لسٹ میں ایک نئی جماعت بلاورستان نیشنل فرنٹ (عبدالحمید خان گروپ )شامل کی گئی ہے باقی تمام جماعتوں کے نام پہلے سے فہرست میں شامل تھے جن میں لشکر جھنگوی،سپاہ محمد پاکستان،جیش محمد،لشکر طیبہ،انجمن امامیہ گلگت وبلتستان،مسلم سٹوڈنٹس آرگنائزیشن(ایم ایس او گلگت بلتستان)،تحریک جعفریہ پاکستان ودیگر تنظیمیں شامل ہیں۔واچ لسٹ میں غلام صحابہ، میامارٹرسٹ شامل ہیں۔وزارت داخلہ نے کالعدم جماعت الدعوۃ اور فلاح انسانیت فاؤنڈیشن پر پابندی کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا ۔ میڈیا رپورٹس کے ماطبق پاکستان نے کالعدم تنظیم جماعت الدعوۃ اور فلاح انسانیت فاؤنڈیشن پر پابندی لگا دی ہے وزارت داخلہ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق جماعت الدعوۃ اور فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کو دہشت گردی ایکٹ 1997 ء کے تحت دونوں جماعتوں پر پابندی لگائی ہے اور انہیں دہشت گردی ایکٹ 1997 ء کے شیڈول ون میں شامل کردیا گیا ہے۔

کارروائی تیز

مزید :

صفحہ اول -