سکھ فوجی جوان پاکستان مخالف جنگی احکامات نہ مانیں ، ورلڈ سکھ پارلیمنٹ

سکھ فوجی جوان پاکستان مخالف جنگی احکامات نہ مانیں ، ورلڈ سکھ پارلیمنٹ

  

لندن،نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن) ورلڈ سکھ پارلیمنٹ نے بھارتی فوج میں شامل سکھ افسران اور جوانوں کو پاکستان کیخلاف جنگ کے احکامات ماننے سے انکار کرنے کی اپیل کر دی ہے۔عالمی نشریاتی ادارے کے مطابق سکھوں کی عالمی تنظیم ورلڈ سکھ پارلیمنٹ کے سربراہ رجیت سنگھ نے بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی اور اپوزیشن لیڈرز کو لکھے گئے کھلے خط میں مودی سرکار کی نفرت آمیز متعصبانہ پالیسیوں کو نہ صرف بھارت بلکہ خطے کیلئے خطرہ قرار دیا۔خط میں رجیت سنگھ کا پاک بھارت کشیدگی کی وجہ بھارتی جنونیت کو قرار دیتے ہوئے کہا کہ جنگ کی موجودہ صورتحال میں ہندو انتہا پسندوں کا ہاتھ ہے، اس لیے سکھ سپاہی پاکستان پر حملے کے بھارتی فوج کا حکم ماننے سے انکار کردیں اور کسی ایسے کھیل کا حصہ نہ بنیں جس میں الیکشن کے لیے قربانی کا بکرا بنایا جا رہا ہو۔دوسری طرف بھارتی وزیر قانون روی شنکر پرساد نے مودی سرکار سے سرجیکل اسٹرائیک اور بالاکوٹ حملے میں نقصانات کا ثبوت مانگنے پر بی جے پی کے کارکنوں کو کانگریس کے خلاف ملک بھر میں مہم چلانے کی ہدایت کردی۔بھارتی حکمراں جماعت بی جے پی اپوزیشن کی جانب سے بالاکوٹ میں نقصانات کا ثبوت مانگنے پر شدید برہم ہے اور اب بی جے پی کی اتحادی جماعتوں کی جانب سے بھی سوالات اٹھائے جارہے ہیں۔بھارتی وزیر قانون روی شنکر پرساد نے پاکستان کے خلاف کی گئی کارروائی کے ثبوت مانگنے پر کانگریس کی شدید مذمت کی اور کہا کہ کانگریس رہنما انڈین ایئرفورس کی کارروائی کو مشکوک بنا کر سکیورٹی فورسز کے حوصلے پست کر رہے ہیں۔وزیر قانون نے کہا کہ جب سرجیکل سٹرائیک کیا تھا تو ثبوت مانگے گئے اور اب بالاکوٹ پر حملہ کیا تو نقصان کا کانگریس کے لیڈرز ثبوت مانگتے ہیں، کیا انہیں اپنی ایئر فورس پر اعتماد نہیں۔

بھارت

مزید :

صفحہ اول -