یو ٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کو بحران سے نکالنے کیلئے 10 ارب روپے کا بیل آؤٹ پیکیج درکار

یو ٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کو بحران سے نکالنے کیلئے 10 ارب روپے کا بیل آؤٹ ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


اسلام آباد (آئی این پی)قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کو وزارت صنعت و پیداوار کے حکام نے آگاہ کیا ہے کہ ملک بھر میں قائم تقریباً 3 ہزار942 یو ٹیلٹی سٹورز کے سالانہ اخراجات 7.8ارب ہیں،یو ٹیلٹی سٹورز کارپوریشن 6 ارب سالانہ ٹیکس ادا کرتی ہے۔اس کے 7.4ارب کے واجبات واجب الادا ہے۔یو ٹیلٹی سٹورز کارپوریشن 2013کے بعد خسارے میں ہیں۔یو ٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کو بحران سے نکالنے کیلئے 10 ارب روپے کا بیل آؤٹ پیکیج درکار ہے۔ رمضان میں عوام کو ریلیف دینے کیلئے 2ارب کی سبسڈی کیلئے درخواست کی ہے۔ملک کے بڑے شہروں میں سٹورز کو اپ گریڈ کر کے میگا سٹورز بنا رہے ہیں،پاکستان سٹیل ملز کے مسئلہ کا جائزہ لینے کیلئے حکومت کی جانب سے تشکیل دی گئی کمیٹی رواں ماہ اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کا اجلاس گزشتہ روز کمیٹی چیئرمین ساجد حسین طوری کی صدارت میں ہوا۔ اجلاس میں وزارت صنعت و پیداوار نے آئندہ مالی سال میں ترقیاتی منصوبوں کیلئے بجٹ تجاویز پر کمیٹی کو بریفنگ دی۔ کمیٹی کو آگاہ کیا گیا کہ نیب نے سٹیل ملز کا کیس خارج کردیا تھا۔ گزشتہ دور حکومت میں اسد عمر نے سٹیل ملز کی گیس بند کرنے کے معاملے پر نیب کو تحقیقات کے لیے کہا تھا۔کمیٹی چیئرمین نے کہا کہ ہمیں بتایا جائے کی ملک میں کل کتنی سرکاری صنعتیں ہیں، کتنی بند ہیں اور کتنی چل رہی ہیں۔تازہ صورتحال سے آگاہ کیا جائے۔یوٹیلٹی کارپوریشن کے حوالے سے بھی شکایات آرہی ہیں۔اس حوالے سے بھی آگاہ کیا جائے۔کمیٹی کو آگاہ کیاگیا ہے کہ ادارے کو کمرشل بنیادوں اورحکومت کی مداخلت کے بغیر چلانا مشکل ہے۔ کمیٹی ارکان نے کہا کہ ادارے کے تحت صرف ٹارگٹڈ سبسڈی دی جائے۔کمیٹی ارکان نے سٹیل ملز کے مسئلہ پر تشویش کا اظہار کیا۔سیکر ٹری صنعت و پیداوار نے کمیٹی کو آگاہ کیا کہ حکومت نے سٹیل ملز کے مسئلہ کا جائزہ لینے کیلئے ایک کمیٹی تشکیل دی ہے جو رواں ماہ میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔کمیٹی نے فیصلہ کیا کی آئندہ اجلاس میں یوٹیلیٹی سٹورز کارپوریشن اور سمیڈا اور دیگر منصوبوں پر غور کیا جائے گا۔
یو ٹیلٹی سٹورز/ پیکیج درکار

مزید :

علاقائی -