5سالہ بچی کو بازیاب کر کے آنیوالی ، پولیس ٹیم پر جورانی گینگ کی فائرنگ ، سب انسپکٹر کانسٹیبل شہید ، ملزموں کیخلاف آپریشن شروع

5سالہ بچی کو بازیاب کر کے آنیوالی ، پولیس ٹیم پر جورانی گینگ کی فائرنگ ، سب ...

  

صادق آباد‘ لیاقت پور ‘ ترنڈہ محمد پناہ ‘ خانپور ( تحصیل رپورٹر ‘ نمائندہ خصوصی ‘ نامہ نگار ) عدالتی حکم پر کمسن بچی کو بازیاب کرانے والی پولیس پارٹی پر جورانی گینگ کی فائرنگ سے سب انسپکٹر اور کانسٹیبل شہیدجبکہ مقدمہ کا مدعی زخمی ہوگیا۔ تفصیل کے مطابق تھانہ شیدانی کے علاقہ کے رہائشی نصر اللہ نے ایڈیشنل سیشن جج لیاقت پور کی عدالت میں رٹ پٹیشن میں موقف اختیار کیاتھا کہ اُس کی پانچ سالہ بیٹی نصرت بی بی کو اُس کے سابق سسرالیوں نے اپنے پاس محبوس کررکھاہے۔ عدالت کے حکم پر تھانہ شیدانی شریف کی چوکی بنگلی کے انچارج سب انسپکٹر ارشد چٹھہ اپنی پولیس پارٹی کے ہمراہ دریائی علاقہ گدپور میں بدنام زمانہ جورانی گینگ کے ٹھکانے سے نصرت بی بی کو بازیاب کرواکر بذریعہ کشتی واپس تھانہ شیدانی آنے کے لئے روانہ ہوئے تو اچانک جورانی گینگ کے غلام مصطفی اور عبداللہ جورانی نے اپنے بارہ نامعلوم ساتھیوں کے ہمراہ کشتی پر فائرنگ کردی ۔ جس کے نتیجہ میں سب انسپکٹر محمد ارشد چٹھہ اور کانسٹیبل جام محمدصادق موقع پر ہی دم توڑگئے جبکہ مدعی مقدمہ نصراللہ خان شدید زخمی ہوگیا۔ شہداء کی میتوں اور زخمی کو شیخ زید ہسپتال رحیم یارخان بھجوادیاگیا۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی پی او رحیم یارخان عمر سلامت پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے علاقہ کا گھیراؤ کرکے ملزمان کی تلاش شروع کردی۔ دوسری طرف شہدا کی نماز جنازہ پولیس لائن رحیم یارخان میں ادا کی گئی جس میں آر پی او بہاول پور عمران محمود،ڈی پی او عمر سلامت، کمانڈر چولستان رینجرز کرنل اسماعیل خٹک پولیس و رینجرز کے افسران اور جوانوں،وکلاء،تاجر برادری،سول سو سائٹی،میڈیا کے نمائندوں،مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد اور عام شہریوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔بعد میں ارشد چٹھہ کی میت ان کے آبائی علاقہ بہاول پور جبکہ محمد صادق کی ٹھل حمزہ تحصیل لیاقت پور روانہ کردی گئیں۔ پولیس تھانہ شیدانی کے حوالدار جاوید اقبال کی مدعیت میں تھانہ ظاہر پیر میں ملزمان غلام مصطفی عبداللہ جورانی اور 12دیگر نامعلوم افراد کے خلاف قتل، اقدام قتل، پولیس پر حملہ اور دہشت گردی کی دفعہ 7 کے تحت مقدمہ درج کرلیاگیاہے۔ شہید سب انسپکٹر محمد ارشد چٹھہ پاکستان پیپلز پارٹی تحصیل لیاقت پور کے سابق صدر چوہدری جمشید رشید کے داماد اور تین کمسن بچیوں کے والد تھے۔ تھانہ ظاہر پیر کے علاقے گد پور میں شہید ہونے والے سب انسپکٹر محمد ارشد چٹھہ اور کانسٹیبل محمد صادق کی جسد خاکی کو انکے آبائی علاقوں میں پہنچا دی گئی شہید کانسٹیبل محمد صادق کا تعلق ٹھل حمزہ تحصیل لیاقت پور سے تھا اس کے جسد خاکی کو ایس پی رحیم یار خان محمد ایاز ،ڈی ایس پی لیاقت پور دستگیر خان لنگاہ ، رانا محمد اسماعیل ،محمد ناصر ،پورے پولیس اعزاز کے ساتھ لائے اور نماز جنازہ کے بعد سلامی کے بعد سپرد خاک کر دیا گیا نماز جنازہ میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ،جبکہ سب انسپکٹر محمد ارشد چٹھہ کا نماز جنازہ بہاول میں پڑھایا گیا جس میں ایس پی انویسٹگیشن رحیم یار خان رانا محمد اشرف اور دیگر پولیس آفسران نے شرکت کی ۔ پولیس تھانہ شیدانی کے حوالدار جاوید اقبال کی مدعیت میں تھانہ ظاہر پیر میں ملزمان غلام مصطفی عبداللہ جورانی اور 12دیگر نامعلوم افراد کے خلاف قتل، اقدام قتل، پولیس پر حملہ اور دہشت گردی کی دفعہ 7 کے تحت مقدمہ درج کرلیاگیاہے۔ شہید سب انسپکٹر محمد ارشد چٹھہ پاکستان پیپلز پارٹی تحصیل لیاقت پور کے سابق صدر چوہدری جمشید رشید کے داماد اور تین کمسن بچیوں کے والد تھے۔

مزید :

صفحہ اول -