وزیر اعظم نے ملک کو قرضوں کے بوجھ سے نکالنے کیلئے سخت فیصلے کئے : شوکت یوسفزئی

وزیر اعظم نے ملک کو قرضوں کے بوجھ سے نکالنے کیلئے سخت فیصلے کئے : شوکت یوسفزئی

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)مقروض ممالک کبھی ترقی نہیں کرتے وزیراعظم عمران خان نے ملک کو قرضوں کے بوجھ سے نکالنے اور ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کیلئے سخت فیصلے کیے ہمیں نا تجربہ کاری کاطنعہ دینے والے تجربہ کاروں نے ملک کو مقروض چھوڑا اور ملک کے خزانے پر ڈاکہ ڈالا ۔پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) نے ملک پر پیسے لگانے کی بجائے اپنے اوپر لگائے اور ریکارڈ کرپشن کی ان خیالات کا اظہار خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا صوبائی وزیر نے کہا کہ پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ کی حکومتوں نے ملک کو قرضوں کی دلدل میں دھکیل دیا تھا ملک کو بدنامی اور دیوالیہ ہونے سے بچانے کے لیے روزنامہ6 ارب روپے قرض واپس کر رہے ہیں ہمیں نا تجربہ کار کہنے والوں نے ملک پر 30 ہزار ارب کا قرضہ چڑھایا ہے جبکہ ملک کی ترقی کے لیے کیا کچھ بھی نہیں ہے ملک کو ترقی کی طرف گامزن کرنے کے لئے باہر سے اور بھی انویسٹمنٹ لا رہے ہیں پوری دنیا کو پتہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان چور اور کرپٹ نہیں ہیں اس لئے انویسمنٹ کر رہے ہیں صوبائی کابینہ میں تو سیع کے بارے میں شوکت یوسفزئی نے کہا کہ وزیراعلیٰ صوبے کے چیف ایگزیکٹو ہ او ر بااختیار وزیراعلیٰ ہیں جب وہ چاہیں گے کابینہ میں توسیع کرلینگے کابینہ میں توسیع کے بارے میں اختلافات کی باتیں بے بنیاد ہیں وزیراعلیٰ صوبائی حکومت کے معاملات کو اچھی طرح چلا رہے ہیں صوبائی بیوروکریسی میں رد و بدل اور تبادلے معمول کی باتیں ہیں۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت شفافیت پر یقین رکھتی ہے اور بیوروکریسی بھی پوری شفافیت اور آزادی سے اپنا کام کررہی ہے انہوں نے کہا کہ حکومت میں کرپشن نا قابل برداشت ہے اور جو بھی کرپشن میں ملوث پایا گیا اس کو حکومت سے خارج کریں گے۔

مزید :

صفحہ اول -