نیب کی جانب سے میئرسیالکوٹ سمیت میونسپل کارپوریشن کے افسران کے خلاف انکوائری شروع

نیب کی جانب سے میئرسیالکوٹ سمیت میونسپل کارپوریشن کے افسران کے خلاف ...
نیب کی جانب سے میئرسیالکوٹ سمیت میونسپل کارپوریشن کے افسران کے خلاف انکوائری شروع

  

سیالکوٹ(ڈیلی پاکستان آن لائن )قومی احتساب بیورو نے سیالکوٹ کے میئر توحید اختر چوہدری سمیت میونسپل کارپوریشن کے افسران کے خلاف دو کروڑ34لاکھ تراسی ہزار روپے کے 27منصوبوں کے ٹھیکے ٹھیکیداروں کو دینے کی بجائے منظور نظر ٹھیکیداروں سے منصوبے غیرقانونی طور پر مکمل کروانے پر ٹھیکیدار ارشد رحمانی کی درخواست پر انکوائری شروع کردی ہے ۔

قومی احتساب بیورو کے ایڈیشنل ڈائریکٹر مظہر جاوید کے مطابق تحقیقات جاری ہیں اور الزامات درست ثابت ہونے پر میئر سیالکوٹ توحید اختر  چوہدری اور دیگر ذمہ داروں کو گرفتار بھی کیا جائے گا تاہم انکوائری جاری ہے اورریکارڈ طلب کرلیا گیا ہے تاکہ الزامات کی تحقیقات ہوسکیں اور قصور واروں کو سزا مل سکے ۔ٹھیکیدار ارشد رحمانی کے مطابق میونسپل کارپوریشن نے 27منصوبوں کے ٹینڈر جاری کئے اور بولی کیلئے جب وہ اور دیگر ٹھیکیدار پہنچے تو انکشاف ہوا کہ منصوبے تو ٹھیکیداروں کو الاٹ ہونے سے قبل ہی منظور نظر ٹھیکیداروں سے مکمل کروائے جاچکے ہیں اور اس مدمیں کرپشن کی ہے ۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -سیالکوٹ -