تضحیک آمیز رویہ قبول نہیں عزت کی موت کو ترجیح دوں گا :نواز شریف

تضحیک آمیز رویہ قبول نہیں عزت کی موت کو ترجیح دوں گا :نواز شریف
تضحیک آمیز رویہ قبول نہیں عزت کی موت کو ترجیح دوں گا :نواز شریف

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن ) سابق وزیر اعظم نواز شریف نے اہلخانہ کے اصرار کے باوجود جیل سے ہسپتال منتقل ہونے سے منع کردیا، خاندانی ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیر اعظم کی والدہ اور دیگر اہلخانہ کی نوازشریف کو جیل سے ہسپتال منتقل ہونے کے لئے منانے کی کوشش ایک بارپھر کامیاب نہیں ہوسکیں۔قائد حزب اختلاف شہباز شریف، والدہ اور مریم نواز نے کوٹ لکھپت جیل میں نواز شریف سے ملاقات کی جس میں اہلخانہ سابق وزیراعظم کو دل کی تکلیف اور طبیعت خرابی کے باعث ہسپتال جانے کیلئے مناتے رہے لیکن نواز شریف نے ہسپتال جانے سے انکار کردیا۔ نواز شریف نے اہلخانہ سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ علاج کی بھیک مانگی ہے اور نہ مانگوں گا کیوں کہ علاج کے نام پر سیاست ہورہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کا تضحیک آمیز رویہ قبول نہیں اور ایک سے دوسرے ہسپتال گھمایا جارہا ہے۔سابق وزیراعظم کا کہنا تھاکہ 5 میڈیکل بورڈز کی رپورٹس کے بعد بھی علاج شروع نہیں ہوا، تضحیک قبول نہیں اور عزت کی موت کو ترجیح دوں گا۔

سابق وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز نے اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ دل کی تکلیف اور طبیعت خرابی کے باوجود میاں صاحب ہسپتال جانے کیلئے راضی نہیں ہوئے، دادی، چچا شہباز شریف اور میرے اصرار پر کہا کہ ہسپتال گھمانے اور علاج کے نام پر کی جانے والی تضحیک کا نشانہ بننے کو تیار نہیں۔

جمعرات کا دن ملاقات کے لیے مخصوص ہے مگر میاں صاحب کی طبیعت کی خرابی کے باعث کل کسی سے بھی ملاقات ممکن نہیں ہو سکے گی۔مریم نواز نے اگلی ہی ٹوئٹ میں بتایا کہ جمعرات کا دن ملاقات کیلئے مخصوص ہے مگر میاں صاحب کی طبیعت کی خرابی کے باعث کل کسی سے بھی ملاقات ممکن نہیں ہو سکے گی۔

مزید :

قومی -