فرحت اللہ بابر نے پیکا ترمیمی آرڈیننس کی سیکشن 20 کو چیلنج کردیا

  فرحت اللہ بابر نے پیکا ترمیمی آرڈیننس کی سیکشن 20 کو چیلنج کردیا

  

 اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سابق سینیٹر فرحت اللہ بابر نے پیکا ترمیمی آرڈیننس کی سیکشن 20 کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا۔ اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ پیر کو سما عت کریں گے جبکہ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ پیکا ترمیمی آرڈیننس کی سیکشن 20 اظہار رائے کی آزادی اور معلومات تک رسائی کے حق کی خلاف ورزی ہے۔ درخوا ست گزار سینیٹر فرحت اللہ بابر نے مؤقف اختیار کیا کہ مجرمانہ ہتک عزت کا استعمال سیاسی اختلاف رائے اور میڈیا کی آزادی کو مجروح کرنے کے لیے کیا جاتا ہے، سیکشن 20 کے اختیارات آمرانہ ہیں جن کی جمہوری معاشرے میں کوئی جگہ نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ پیکا ترمیمی آرڈی نینس پر عدالت پہلے ہی اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کر چکی ہے، حکم امتناع کی متفرق درخواست میں آرڈیننس پر عمل درآمد روکنے کی استدعا بھی کی گئی ہے۔فرحت اللہ بابر نے اپنی درخواست میں سیکریٹری قانون، سیکریٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی، چیئرمین پی ٹی اے اور ڈی جی ایف آئی اے کو فریق بنایا ہے۔

فرحت بابر

مزید :

صفحہ اول -