ویمن ورلڈ کپ ، بھارت نے یکطرفہ مقابلے کے بعد پاکستان کو 107 رنز سے شکست دے دی

ویمن ورلڈ کپ ، بھارت نے یکطرفہ مقابلے کے بعد پاکستان کو 107 رنز سے شکست دے دی
ویمن ورلڈ کپ ، بھارت نے یکطرفہ مقابلے کے بعد پاکستان کو 107 رنز سے شکست دے دی

  

ماؤنٹ مانگنوئی ( ڈیلی پاکستان آن لائن )  ویمن ورلڈ کپ کے میچ میں پاکستانی ٹیم کو اپنے پہلے ہی میچ میں بد ترین شکست کا سامنا کرنا پڑ گیا، روایتی حریف بھارت  کے  244 رنز کے جواب میں پاکستانی "کڑیاں " 137 رنز ہی بنا پائیں ۔

ویمن کرکٹ ورلڈ کپ کے چوتھے میچ میں پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں  مقابل آئیں ، پہلے بھارتی بلے بازوں اور پھر بھارتی باؤلرز نے پاکستانی ٹیم کی ایک نہ چلنے دی  ،  بھارتی ٹیم نے پہلے بلے بازی  کرتے ہوئے  مقررہ  50 اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر  244 رنز بنائے ، بعد ازاں بھارتی باؤلرز نے قومی ٹیم کو 137 رنز پر محدود کر دیا۔

بھارتی باؤلرز نے پاکستانی بلے بازوں کی ایک نہ چلنےدی ، کوئی بھی پاکستانی بلےباز کھل کر نہ کھیل سکی ، قومی ٹیم کی وکٹیں ایک کے  بعد ایک گرتی چلی گئیں ،  پورے میچ میں ایک مرتبہ بھی صورتحال پاکستان کے حق میں نظر نہ آئی ، پاکستان کی پہلی وکٹ اوپنر جویریہ خان کی صورت میں گری جو صرف 11 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئیں ۔ 53 کے مجموعی سکور پر ٹاپ آرڈر کپتان بسمہ معروف بھی  وکٹ کیپر کو کیچ تھما بیٹھیں، انہوں نے 15 رنز کئے ۔ صرف پانچ سکور بعد عمائمہ سہیل بھی کیچ آؤٹ ہو گئیں ۔67 کے مجموعی سکور پر اوپنر سدرہ امین بھی وکٹ کیپر کو کیچ تھما بیٹھیں ، انہوں نے 64 گیندوں پر  30 رنز بنائے ۔

70 کے مجموعی سکور پر ندا ڈار بھی وکٹ کیپرکو کیچ تھما کر پویلین لوٹ گئیں ،انہوں نے صرف4 سکور بنائے ۔87 کے مجموعی سکور پر عالیہ ریاض بھی چلتی بنیں، انہوں نے صرف 11 سکور بنائے اور سٹیمپ آؤٹ ہوئیں  جبکہ  98 کے مجموعی سکور پر فاطمہ ثناء بھی ایل بی ڈبلیو ہو گئیں ۔ 113 کے سکور پر  وکٹ کیپر سدرہ نواز بھی ایل بی ڈبلیو ہو گئیں ۔ نشرح سندھو بغیر کوئی رن بنائے ہی پویلین لوٹیں ۔ 

نویں نمبر پر کھیلنے کیلئے آنے والی ڈیانا بیگ نے قومی ٹیم کو عبرتناک شکست سے بچانے کی کوشش کی مگر وہ 24 رنز ہی بنا پائیں ۔ ڈیانا بیگ آؤٹ ہونے والی آخری کھلاڑی تھیں ۔

بھارت کی جانب سے راجیشوری  نے 4، جھولان گوسوامی ، سنیہ رانا  نے دو دو   جبکہ میگھنا سنگھ اور  دیپتی شرما نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

اس سے قبل بھارت نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا اور مقررہ 50 اوورز میں  7 وکٹوں کے نقصان پر 244 رنز بنائے ۔  بھارت  کی پہلی وکٹ تیسرے اوور کی آخری گیند پر ہی گر گئی جب ڈیانا بیگ نے  شفالی ورما کو کلین بولڈ کر دیا ۔ اوپنر سمرتی مندھرنا نے  ٹاپ آرڈر دیپتی شرما کے ساتھ مل کر 92 رنز کی پارٹنر شپ قائم کی جہاں 96 کے مجموعی سکور پر ٹاپ آرڈر دیپتی شرما نشرح سندھو کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئیں ، دیپتی نے 40 رنز بنائے ۔ صرف دو سکور کے بعد  98 کے مجموعی سکور پر سمرتی مندھرنا بھی چلتی بنیں ، وہ انعم امین کی گیند پر انہیں کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئیں ، سمرتی نے  52 سکور کئے ۔

 مڈل آرڈر ہرمن پریت بھارت کی جانب سے آؤٹ ہونے والی پانچویں بلے باز تھیں ، انہوں نے 5 سکور کئے اور ندا ڈار کی گیند پر ایل بی ڈبلیو ہوئیں ،  چھٹے نمبر پر بلے بازی کیلئے آنے والی ریچا گھوش بھی ندا ڈار کا شکار ہوئیں ، وہ کلین بولڈ ہوئیں ۔ کپتان میتھالی راج کی مزاحمت بھی صرف 9 رنز تک محدود رہیں ، وہ  نشرح سندھو کی گیند پر ڈیانا بیگ کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئیں ۔ 

ساتویں وکٹ کی شراکت میں سنیہ رانا اور پوجا واستراکر نے 122 رنز بنائے اور سکور کو 236 تک  پہنچایا ، دونوں کھلاڑیوں نے ففٹیز بنائیں جہاں  پوجا 67 سکور بنا کر فاطمہ ثناء کی گیند پر کلین بولڈ ہو گئیں جبکہ سنیہ رانا 53 رنز کے ساتھ ناقابل شکست رہیں ۔ پاکستان کی جانب سے ندا ڈار ، نشرح سندھو نے دو ،دو  جبکہ ڈیانا بیگ ، انعم امین  اور فاطمہ ثناء نے ایک ایک کھلاڑی کو پویلین کی راہ دکھائی ۔

مزید :

اہم خبریں -کھیل -