چیمپیئنز ٹرافی، قومی کھلاڑی تربیتی کیمپ میں خامیاں دور کرنے میں مصروف

چیمپیئنز ٹرافی، قومی کھلاڑی تربیتی کیمپ میں خامیاں دور کرنے میں مصروف
چیمپیئنز ٹرافی، قومی کھلاڑی تربیتی کیمپ میں خامیاں دور کرنے میں مصروف

  



چیمپیئنز ٹرافی کے لئے پاکستان کرکٹ ٹیم کا تربیتی کیمپ ایبٹ آباد میںجاری ہے جس میں کھلاڑیوں کی بڑی تعداد شرکت کررہی ہے اور اس کیمپ کی خاص بات یہ ہے کہ اس میں سابق کپتان اور مایہ ناز بیٹسمین جاوید میاں داد بھی کھلاڑیوں کی تربیت کےلئے موجود ہوں گے اب دیکھنا یہ ہے کہ اس تربیتی کیمپ میں کھلاڑی کس طر ح اپنی خامیوں کو دورکرتے ہیں اور کس طرح کوچز ان کی توجہ دیتے ہیں یہ کیمپ کئی دن تک جاری رہے گا اس کیمپ کو ایبٹ آباد میں لگانے کا مقصد یہ ہے کہ انگلینڈ کا موسم بھی اس سے مناسبت رکھتا ہے اور اس طرح کھلاڑیوں کو وہاں پر جاکر کھیلنے میں کوئی مشکل پیش نہیں آئے اس کیمپ کا اس مقام پر انعقاد خوش آئند ہے پاکستان کے لئے یہ ایونٹ بہت اہمیت کاحامل ہے اس ایونٹ میں پاکستان کا ہر بڑی ٹیم سے مقابلہ ہوگا اور ہر میچ میں کامیابی حاصل کرنا پاکستان کےلئے بہت ضروری ہوگا اس لئے پاکستانی کرکٹ ٹیم کو اس ایونٹ میں کامیابی کے لئے بہت زیادہ محنت کی ضرورت ہے اور اس کی کیسی تیاری کی جاتی ہے اس کا تو اس وقت ہی پتہ چلے گا جب قومی ٹیم میدان میںاترے گی پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ذکاءاشرف بہت پر امید ہیں کہ ٹیم کے کھلاڑی اس کیمپ میں اپنی تمام خامیوں کو دور کرلیں گے جب کہ ان کو یہ بھی امید ہے کہ کھلاڑی اس ایونٹ میں شائقین کی امیدوں پر پورا اتریں گے اس سے قبل پاکستان کرکٹ ٹیم نے جنوبی افریقہ کا دورہ کیا تھا اور وہاں پر اس نے اتنی اچھی پرفارمنس کا مظاہرہ نہیں کیا تھا اس کے بعد قومی ٹیم اب اس ایونٹ میں شریک ہوگی جہاں پر اس کا مقابلہ بھارت کےساتھ بھی ہوگا اور اس میچ کو بہت اہم قرار دیا جارہا ہے اس سے قبل اس ایونٹ میں جب بھی پاکستان کا بھارت کے ساتھ ٹاکر ہوا ہے تو بھارتی ٹیم نے ہی فتح اپنے نا م کی ہے لیکن اس مرتبہ ٹیم بھارت کو شکست دینے کے لئے پر امید ہے بہرحال شائقین کی نظریں اس ایونٹ پر مرکوز ہیں اور وہ قومی ٹیم کی کامیابی کےلئے بھی پر امید ہیں اس ایونٹ کے لئے جہاں پر کھلاڑی بھرپور تربیت حاصل کررہے ہیں ضرورت اس بات کی بھی ہے کہ ایونٹ کے دوران تمام کھلاڑی متحد ہوکر کھیل پیش کرے کیونکہ جب تک کھلاڑی یک جان نہیں ہوں گے اس وقت تک ٹیم کی جیت کے امکانات روشن نہیں ہیں۔

مزید : کالم