لاہور چیمبر امرتسر کے ٹریلیم مال میں 4روزہ پاکستان شو منعقد کریگا

لاہور چیمبر امرتسر کے ٹریلیم مال میں 4روزہ پاکستان شو منعقد کریگا

  

                                                                لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری پنجاب ہریانہ دہلی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے اشتراک سے تاریخ میں پہلی مرتبہ 8سے 12مئی تک امرتسر کے ٹریلیم مال میں پاکستان شو منعقد کررہا ہے۔ یہ بات لاہور چیمبر کے صدر انجینئر سہیل لاشاری نے لاہور چیمبر میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتائی۔ لاہور چیمبر کے سینئر نائب صدر میاں طارق مصباح اور نائب صدر کاشف انور بھی اس موقع پر موجود تھے۔ لاہور چیمبر کے صدر نے کہا کہ پاکستان کے مختلف چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے تاجروں کا ایک بڑا وفد بھی پاکستان شو 2014ءمیں شرکت کرے گا۔ پاکستان شو پاکستان کی تاجر برادری کو بھارت کے ساتھ وسیع ہوتے تجارتی تعلقات سے ہم آہنگ ہونے میں مدد دے گا۔ انجینئر سہیل لاشاری نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان تعلقات کی بہتری میں تجارت کا فروغ بہت اہم کردار ادا کرسکتا ہے لہذا لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اس سلسلے میں خصوصی اقدامات اٹھا رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس پانچ روزہ میگا ایونٹ میں کلچرل شوز بھی شامل ہیں جن میں نامور پاکستانی گلوکار اپنے فن کا مظاہرہ کریں گے۔

لاہور چیمبر کے صدر نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان تجارت بتدریج بڑھ رہی ہے، سال 2003ءمیں باہمی تجارت کا حجم 250ملین ڈالر تھا جو بڑھ کر سال 2014ءمیں 2.4ارب ڈالر تک پہنچ گیا جو سالانہ پچیس فیصد شرح نمو ظاہر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماہرین کے مطابق دونوں ممالک کے درمیان باہمی تجارت مزید دس گنا بڑھ سکتی ہے، لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی جانب سے امرتسر میں پاکستان شو کا انعقاد اسی جانب ایک قدم ہے۔ انہوں کہا کہ ٹیکسٹائل، ایگریکلچر، ہیلتھ کیئر، جیم اینڈ جیولری، سٹیل انڈسٹری، ویئرہاﺅسنگ، تعمیراتی سامان اور جیوٹ پروڈکٹس سمیت مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی 90سے زائد پاکستانی کمپنیاں اپنی مصنوعات کی نمائش کریں گی جس سے دنیا کو پاکستانی مصنوعات کے بہترین معیار سے آگاہی ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان شو سے تمام سٹیک ہولڈرز کو فائدہ ہوگا، یہ پاکستان اور بھارت کے تاجروں کے درمیان تجارتی تعلقات کو وسعت دینے، کاروباری لاگت میں کمی لانے اور روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے میں بہت مددگار ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی ایشیاءکی پوٹینشل سے فائدہ اٹھانے کے لیے اب عملی اقدامات اٹھانا ہونگے۔

مزید :

کامرس -