بشارالاسد کا صدارتی انتخابات کے لیے کاغذات نامنزدگی منظور

بشارالاسد کا صدارتی انتخابات کے لیے کاغذات نامنزدگی منظور

  

                                                               دمشق(ثناءنیوز)شام کی ایک اعلیٰ عدالت نے صدر بشارالاسد سمیت تین امیدواروں کے آیندہ صدارتی انتخابات کے لیے جمع کرائے گئے کاغذاتِ نامزدگی منظور کر لیے ہیں۔دستوری عدالت عظمیٰ کے ترجمان ماجد خضری نے ایک بیان میں کہا کہ ''صدر اسد کے علاوہ حسن عبداللہ النوری اور رکن پارلیمان ماہر عبدالحفیظ حجار کے کاغذات نامزدگی منظور کیے گئے ہیں اور باقی امیدواروں کے مسترد کردیے گئے ہیں۔مسترد امیدوار7 مئی تک عدالت کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کرسکتے ہیں''۔خانہ جنگی کا شکار شام میں 3 جون کو صدارتی انتخاب کے لیے ووٹ ڈالے جائیں گے۔شامی صدر کے بارے میں توقع یہی ہے کہ وہ ان انتخابات میں بآسانی فاتح بن جائیں گے۔وہ 2000 میں اپنے والد حافظ الاسد کے انتقال کے بعد سے ملک کے صدر چلے آرہے ہیں۔ان کی موجودہ صدارتی مدت 17 جولائی کو ختم ہو گی۔لیکن شامی حکام نے اب تک یہ واضح نہیں کیا کہ ملک کے شورش زدہ علاقوں میں کیونکر صدارتی انتخابات منعقد ہوں گے اور خانہ جنگی کے ماحول میں ہونے والی پولنگ کی اعتباریت اور ساکھ کیا ہوگی۔البتہ بشارالاسد کی واضح اکثریت کو یقینی بنانے کے لیے پہلے ہی ایسے قانونی اور آئینی اقدامات کر لیے گئے ہیں کہ ان کے خلاف کوئی موثر امیدوار سامنے نہ آسکے۔

مزید :

عالمی منظر -