چینی ارب پتی نے دنیا کا نقشہ بدلنے کا عزم کر لیا

چینی ارب پتی نے دنیا کا نقشہ بدلنے کا عزم کر لیا
چینی ارب پتی نے دنیا کا نقشہ بدلنے کا عزم کر لیا
کیپشن: Chinese Billionaire

  

بیجینگ (بیورو رپورٹ) 50 بلین ڈالر مالیت کے پراجیکٹ نیکاراکوا کینال میں ایک چینی بزنس مین کا نام سامنے آنے پر نئی بحث چھڑ گئی۔ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر وانگ ینگ ایک معمولی بزنس مین ہے لیکن وہ اس بات پر مُصر ہے کہ وہ بحیرہ کیربیین میں جہاز رانی سے متعلق اس عالمی پراجیکٹ میں بیجنگ حکومت کا ایجنٹ  نہیں بلکہ خود یہ پراجیکٹ مکمل کرنا چاہتا ہے ۔ نہر بنانے کے کام پر سو ملین ڈالر خرچ کرنے کے دعوے دار وانگ ینگ کا کہنا ہے کہ ”میں جانتا ہوں کہ آپ اس بات پر یقین نہیں کریں گے، ہو سکتا ہے آپ سوچ رہے ہوں کہ چینی حکومت کے کچھ لوگوں کی مجھے حمایت حاصل ہو“۔ اس کا کہنا ہے کہ وہ ذاتی حیثیت میں اس پراجیکٹ میں دلچسپی رکھتا ہے اور اس میں اتنی سرمایا کاری کی اہلیت ہے کہ اس منصوبے کو پایا تکمیل تک پہنچا سکے. صدر سمیت چین کے کئی اعلیٰ حکام ملکی وائرلیس کمیونیکیشن ٹیکنالوجیز کمپنی کا دورہ بھی کر چکے ہیں جہاں چار سال قبل وانگ نے کنٹرول سنبھال لیا تھا۔ 41 سالہ وانگ بیجنگ ٹیلی کام کمپنی کے ہیڈکوارٹر میں دیئے گئے اپنے دو انٹرویوز میں نیکاراکوا بیجینگ معاہدہ کے بارے میں کئی بار بات کر چکے ہیں لیکن ان کی پُراسرار شخصیت نے سب کر حیران کر رکھا ہے۔ یہ کینال  پیسیفک اور اٹلانٹک اوشنز کو آپس میں ملائے گا اور خطے میں تجارت کے اضافے کا سبب بن سکتا ہے.

مزید :

بزنس -