خواتین سمیت 3 افراد کا قتل رشتہ نہ دینے کا تنازع نکلا

خواتین سمیت 3 افراد کا قتل رشتہ نہ دینے کا تنازع نکلا
 خواتین سمیت 3 افراد کا قتل رشتہ نہ دینے کا تنازع نکلا
کیپشن: relatives

  

لا ہور (شعیب بھٹی )گلشن را وی کے علاقہ میں2خوا تین سمیت3افرا د کا قتل ر شتہ نہ دینے کا تنا ز ع نکلا ،8ما ہ قبل قتل ہو نے وا لے بدنام زمانہ اشتہاری ملزم کے بھا ئی کے قتل کا بد لہ لینے کے لئے4 ملز ما ن بھا ئیو ں نے ا پنے د یگر 3کز نو ں سے مل کر مذ کو ر ہ افرا د کو مو ت کی نیندسلا د یا ، مقتو لین کے ور ثا نے الزا م عا ئد کیا ہے کہ پو لیس نے مر کز ی ملز م عمرا ن کو ر شو ت لے فرا ر کر د یا ہے، ورثا کا پو لیس کے خلا ف احتجا ج ،وز یر ا علی ٰ پنجا ب اور آ ئی جی سے و ا قعہ کی ا نکوائری اور ملز ما ن کو گرفتا ر کر نے کا مطا لبہ ،پو لیس نے قتل ہو نے وا لی ما ں بیٹی اور محلہ دا ر کی لا شو ں کو پو سٹ ما ر ٹم کے بعد ور ثا ء کے حوا لے کر دیا ،جبکہ 12گو لیا ں لگنے وا لے پا نچو یں جما عت کے طا لبعلم کی حا لت نا زک بتا ئی جا تی ہے،48گھنٹے گز ر نے کے با و جو د بھی پو لیس تا حا ل صر ف ایک ملز م کو گرفتا ر کر سکی ہے ۔تفصیلا ت کے مطا بق تھانہ گلشن راوی کے علاقہ رستم پارک میں کرایہ کے مکان میں رہنے والی 4بچو ں کی ما ں آمنہ کا تعلق شیر کوٹ سے تھا جہاں ایک سال قبل شیراکوٹ کا بدنام زمانہ اشتہاری ملزم (مر حو م )ملک بگا اس کی بیٹی 19سالہ ثناء کے ساتھ شادی کرنا چاہتا تھا مگر ملک بگا کے کردار کو دیکھ کر آمنہ نے رشتہ دینے سے انکار کر دیا جس پر ملک بگا نے ثناء کو اغوا کرنے کی کوشش کی جس میں وہ ناکام ہو گیا ۔ چھ ماہ قبل آمنہ کے بڑے بیٹے زوہیب نے ملک بگا کو گولیاں مار دیں جس پر پولیس نے اس کو گرفتار کر کے جیل بھیج دیا تاہم ملک بگا کے رشتہ داروں نے بدلہ لینے کے لئے تین ماہ قبل آمنہ اور اس کے اہل خانہ پر حملہ کر دیا جس میں آمنہ اور اس کی بیٹیاں زخمی ہوئیں مگر پولیس نے ان کو تحفظ دینے کی بجائے ان کو گھر چھوڑ کر روپوش ہونے کا مشورہ دیا جس پر آمنہ اپنے بچوں کو لے کر شیر کوٹ سے گلشن راوی رستم پارک کے ایک کرایہ کے مکان میں منتقل ہو گئی۔ ملک بگا کے رشتہ داروں نے ان کا پیچھا نہ چھوڑا ور گزشتہ روز تین موٹر سائیکلوں پر سوار چھ افراد ملک عارف (ملک بگا کا ماموں )عمر ،تنویر(ملک بگا کے بھتیجے ) ذیشان اور کاکا (بگا کے رشتہ دار) اور دوست بلو گجر ان کے گھر میں گھس گئے ۔عینی شاہدین مقتولہ آمنہ کے سگے بھائی ساجد اور محمد سرفراز کے مطابق ان لوگوں نے گھر میں گھس اندھا دھند فائرنگ شرع کر دی جس سے موقع پر موجود 45سالہ آمنہ ،اس کی بیٹی 19سالہ ثناء اور ان کا محلہ دا ر 35سالہ شہزاداور 11سالہ اویس شد ید ز خمی ہو گئے۔ امدا د ی ٹیمو ں نے ز خمیو ں کو طبی امدا د کے لئے مقا می ہسپتا ل پہنچا یا جہا ں ڈا کٹرو ں نے آ منہ ،ثنااور محلہ دا ر شہزا د کی مو ت کی تصد یق کر د ی جبکہ11سا لہ او یس کی حالت بدستور خطرے میں ہے جبکہ گھر میں موجود چھوٹی بیٹی ماہ نور چھت پر کام کے سلسلہ میں گئی اورمعجزانہ طور پر نظر نہ آنے کی وجہ سے بچ گئی ،ملزمان فائرنگ کر کے موقع سے فرار ہو گئے ۔ پو لیس نے ضرو ر ی کا رروا ئی کے بعد لا شو ں کو ور ثا ء کے حوا لے کر د یا ، بعدازا ں مقتو لیں کو سینکڑو ں سو گو ارو ں کی مو جو د گی میں سپر د خا ک کر د یا گیا ۔ پو لیس نے مخبر کی اطلاع پرچھاپہ مار کر تہرے قتل میں ملوث ملز م عا ر ف کو گرفتا ر کر لیا ، ذرا ئع کے مطا بق مر کز ی ملز م (عمرا ن )کو رشو ت لیکر چھو ڑ د یا گیا ہے ۔ مقتو لین کے ور ثا نے سڑ ک بلا ک کر کے پو لیس کے خلا ف اٖحتجا ج کیا اور اعلی ٰحکا م سے انصا ف کی اپیل کی ہے ۔

مزید :

علاقائی -