گمشدہ ملائیشین طیارہ میں آتش گیر مادے کی موجودگی کا انکشاف

گمشدہ ملائیشین طیارہ میں آتش گیر مادے کی موجودگی کا انکشاف
گمشدہ ملائیشین طیارہ میں آتش گیر مادے کی موجودگی کا انکشاف
کیپشن: plane

  

کوالا لمپور (بیورورپورٹ) ملائیشاء کے لاپتہ ہونے والے طیارے کی تحقیقات کا عمل جاری ہے اور آئے روز ایسے انکشافات ہورہے ہین جن سے اس طیارے کی گمشدگی کا معمہ مزید پراسرار ہوتا جارہا ہے۔ اب یہ انکشاف ہوا ہے کہ طیارے میں بھاری تعداد میں لیتھیم آئن بیٹریاں لے جائی جارہی تھیں اور کا وزن تقریباً 200 کلو ظاہر کیا گیا تھا جبکہ یہ بیٹریاں جس سامان کا حصہ تھیں اس کا کل وزن تقریباً ڈھائی ٹن تھا اور اس بارے میں کچھ ظاہر نہیں کیا گیا کہ باقی سامان کیا تھا۔ جبکہ ملائیشیا ایئرلائن نے ایک بیان میں کہا گیا کہ باقی تقریباً 2,232 کلو وزن کو ریڈیو اسیسریز اور چارجرز ظاہر کیا گیا تھا۔ ’’سٹار‘‘ نامی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ ملائیشیاء کی ایئرلائن کی طرف سے یہ تفصیلات پہلے ظاہر نہیں کی گئی تھیں اور یہ کہ ایئرلائن نے جتنی بیٹریوں کا اعتراف کیا ہے، پہلے ان کی تعداد اور وزن کی کوئی تفصیلات جاری نہیں کی گئی تھیں۔ کچھ ماہرین نے خطرناک بیٹریوں کو طیارے کی تباہی کا ذمہ دار ہونے کا شک ظاہر کیا ہے۔ ملائیشیاء کا یہ طیارہ تقریباً 2 ماہ پہلے بیجنگ جاتے ہوئے لاپتہ ہوگیا تھا، اس میں 239 افراد سوار تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -اہم خبریں -