ائیر ہوسٹسز کا شریفانہ لباس کا مطالبہ

ائیر ہوسٹسز کا شریفانہ لباس کا مطالبہ
ائیر ہوسٹسز کا شریفانہ لباس کا مطالبہ
کیپشن: Air hostess

  

ہانگ کانگ (نیوزڈیسک) ہانگ کانگ کی کیتھے پیسفک ایئرلائن کی ایئر ہوسٹیس ایک انوکھے مسئلے پر احتجاج کررہی ہیں۔ ان کا خیال ہے کہ ایئرلائن نے ان کی یونیفارم ضرورت سے زیادہ ہی سیکسی بنادی ہے۔ ایئرلائن کی نئی یونیفارم ایک مختصر بلاؤز اور تنگ سکرٹ پر مشتمل ہے جس سے اکثر ایئرہوسٹس ناخوش ہیں۔ ایئرہوسٹسوں کی یونین کا کہنا ہے کہ یہ یونین عملے کو جنسی طور پر ہراساں کئے جانے کا سبب بن رہی ہے۔ اس سے پہلے ایسی تفصیلات سامنے آچکی ہیں کہ جن سے اس یونیفارم کے متعارف ہونے کے بعد ایئر ہوسٹسوں کو جنسی طورپر ہراساں کئے جانے کے واقعات میں اضافہ کی تصدیق ہوتی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق نئی یونیفارم کی وجہ سے ہر دس میں سے ایک فلائٹ پر جنسی ہراساں کئے جانے کا واقعہ ہوگا۔ ایئر ہوسٹسوں کی یونین کا یہ بھی کہنا ہے کہ ایئرلائن جان بوجھ کر ایسے اقدامات کررہی ہے کہ جس سے ایئرہوسٹسوں کا اشتعال انگیز لباس پہنا کر مسافروں کی تفریح طبع کا سامان بنایا جائے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -