دوائیوں کا توڑ۔۔۔شہد

دوائیوں کا توڑ۔۔۔شہد
دوائیوں کا توڑ۔۔۔شہد
کیپشن: anti biotec

  

لندن (بیورنیوز) شہد کا وہ تحفہ ہے کہ جس سے انسان صدیوں سے مستفید ہوتا چلا آیا ہے۔ عمومی قوت مدافعت سے لے کر طرح طرح کی بیماریوں سے بچاؤ کیلئے شہد کو تیر بہدفت نسخے کے طور پر استعمال کیا جاتا رہا ہے۔ لیکن جراثیموں کے خلاف شہد کتنا کارگر ہے اس کا اندازہ ان درجنوں تحقیقات سے ہوتا ہے جو کہ اس کے جراثیموں کے خلاف بہترین قدرتی تحفظ فراہم کرنے کی تصدیق کرتی ہیں۔ ملائیشیا کی یونیورسٹی آف ملایا، ساؤتھ افریقہ کی یونیورسٹی آف ساؤتھ فورٹ ہیر، اسی طرح آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی یونیورسٹیوں اور نیویارک کی ویلی فاؤنڈیشن فار سائنس کی تحقیقات نے شہد کے ان اوصاف کی تصدیق کردی ہے۔ ان تحقیقات سے ثابت ہوا ہے کہ شہد نہ صرف اینٹی بائیوٹک ہے بلکہ اینٹی وائرس بھی ہے، ماہرین نے کا یہ بھی کہنا ہے کہ شہید اور ادرک کے پاؤڈر کا مرکب مرس جیسے خطرناک وائرس کو بھی بڑھنے سے روک سکتا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -