کشمیر میں لاکھوں تعلیم یافتہ نوجواں بے روز گار ہیں ‘میر واعظ

کشمیر میں لاکھوں تعلیم یافتہ نوجواں بے روز گار ہیں ‘میر واعظ

سری نگر(کے پی آئی(حریت کانفرنس (ع )کے چیئرمین میرواعظ عمرفاروق نے کشمیر میں اقتصادی بدحالی اور بڑھتی ہوئی بے روزگاری کے مسئلے کو کم کرنے کیلئے پرائیویٹ سیکٹر کو بڑھاوا دینے کی ضرورت پر زور دیا ہے ۔انہوں نے کہا ہے کہ یہاں کے تعلیم یافتہ نوجوانوں کو چاہیے کہ وہ سرکاری نوکریوں پر انحصار کرنے کے بجائے خود روزگار اور اقتصادی خود انحصاری کے راستے پر گامزن ہوجائیں۔ سرینگر کے باغ علی مرداں انڈسٹریل اسٹیٹ میں وادی کے ابھرتے نوجوان صنعت کار ظہور احمد راتھر کی جانب سے قائم کردہ الذائقہ سپایسزکے نام سے صنعتی یونٹ کا افتتاح کرتے ہوئے میرواعظ نے مذکورہ نوجوان کی کوششوں کو سراہا۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حالات میں یہاں کے نوجوانوں کی جانب سے اس طرح کے اقدامات کی حوصلہ افزائی کی جانی چاہئے کیونکہ اس قسم کی کوششیں یہاں کی اقتصادی خود کفالت کے ناگزیر تقاضے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج کشمیر میں لاکھوں ایسے تعلیم یافتہ نوجواں ہیں جو اعلی تعلیمی ڈگریوں کے حصول کے باوجود نہ صرف بے روزگار ہیں بلکہ کوئی نوکری یا روزگار نہ ملنے کی وجہ سے طرح طرح کی ذہنی پریشانیوں میں مبتلا ہیں ۔ میرواعظ نے کہا کہ کشمیر میں خود روزگار کے مواقع اور ذرائع کی کوئی کمی نہیں ہے لیکن بدقسمتی سے مقامی سطح پر ضروری اشیا کی پیداواری صلاحیت میں اضافہ کرنے کے بجائے ہمیں ہر چیز باہر سے منگوانے کی عادت پڑ گئی ہے۔

انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ ذاتی سطح پر چھوٹے چھوٹے صنعتی یونٹ قائم کر نے کا راستہ اختیار کریں کیونکہ ایسا کرنے سے نہ صرف بے روزگاری کے مسئلے کو کم کرنے میں مدد ملے گی بلکہ مقامی پروڈکٹس کی بیرون ریاست مارکٹنگ میں بھی اضافہ کرنا ممکن ہو سکتا ہے۔ اس موقعے پر فیڈریشن چیمبر آف انڈسٹریز کے سابق صدر شکیل قلندر، باغ علی مرداں انڈسٹیریل اسٹیٹ کے صدر محمد فضل اور مقامی صنعت کاروں اور عام لوگوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔

مزید : عالمی منظر