کوٹ لکھپت جیل میں سزائے موت کے مجرم کو تختہ دار پرلٹکا دیا گیا،نعش ورثاء کے حوالے

کوٹ لکھپت جیل میں سزائے موت کے مجرم کو تختہ دار پرلٹکا دیا گیا،نعش ورثاء کے ...
کوٹ لکھپت جیل میں سزائے موت کے مجرم کو تختہ دار پرلٹکا دیا گیا،نعش ورثاء کے حوالے

  

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک)سزائے موت کے مجرم کو لاہور کی کوٹ لکھپت جیل میں تختہ دار پرلٹکا دیا گیا۔مجرم نے 1998 میں ڈکیتی کے دوران مزاحمت پر 2 افراد کو قتل کیا تھا۔پھانسی کے موقع پر کوٹ لکھپت جیل کے اطراف میں سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔مجرم ذوالفقار نے 1998 میں ڈکیتی کے دوران 2 افراد کو قتل کیا تھا۔انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ملزم کو سزائے موت سنائی تھی۔منگل کے روز ذوالفقار کی اس کے لواحقین سے آخری ملاقات کروائی گئی اورآج مقامی مجسٹریٹ کی موجودگی میں اسے تختہ دار پر لٹکا دیا گیا۔پھانسی کے بعد مجرم کی نعش ضروری کارروائی کے بعد اسکے لواحقین کے حوالے کر دی گئی۔واضح رہے کہ 16 دسمبر 2014 کو پشاور میں آرمی پبلک اسکول پر حملہ کیا گیا تھا جس کے بعد حکومت نے فیصلہ کیا تھا کہ سزائے موت پر عملدر آمد پر 6 سال سے عائد غیر اعلانیہ پابندی ختم کر دی جائے جس کے بعد سے اب تک 100 سے زائد مجرموں کو تختہ دار پر لٹکایا جا چکا ہے۔

مزید : جرم و انصاف