لوڈ شیڈنگ بڑھ گئی‘ مرمت کے نام پربھی بجلی کی بندش کا سلسلہ شروع کر دیاگیا

لوڈ شیڈنگ بڑھ گئی‘ مرمت کے نام پربھی بجلی کی بندش کا سلسلہ شروع کر دیاگیا

  

لاہور (کامرس رپورٹر)ملک میں بجلی کی پیداوار میں کمی اور ڈیمانڈ میں اضافہ کے باعث شارٹ فال مزید بڑھ گیا جس کی وجہ سے لوڈ شیڈنگ کے دورانیہ میں اضافہ کر دیا گیا ۔ حکومت کے بڑے بڑے دعوؤں کے باوجود بھکی پاور پلانٹ سے نیشنل سسٹم میں مئی کا ایک ہفتہ گزرنے کے باوجود بھی ایک میگاواٹ بجلی بھی نہیں آ سکی ۔ غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے ساتھ بجلی کی مرمت کے نام پربھی بجلی کی بندش کا سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے ۔ حتیٰ کہ نماز جمعہ کے موقع پر بھی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ جاری رکھا گیا جس کے باعث نمازیوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔ بار بار ہونے والی لوڈ شیڈنگ سے کئی علاقوں میں پانی کی بھی قلت ہو گئی ۔ ملک کے بیشتر علاقوں میں گرمی کی شدت بڑھنے سے بجلی کی ڈیمانڈ میں اضافہ ہوا ہے جبکہ دوسری جانب ڈیموں سے پانی کا اخراج کم کئے جانے کے باعث ہائیڈل کی پیداوار میں تقریبا 600 میگاواٹ کی کمی ہو گئی ہے ۔ تربیلا سے پانی کے اخراج میں 35 ہزار کیوسک جبکہ منگلا سے 5 ہزار کیوسک کی کمی کر دی گئی ہے ۔ گزشتہ روز تربیلا سے 60 ہزار کیوسک اور منگلا سے 70 ہزار کیوسک پانی کا اخراج کیا گیا ۔ ملک میں بجلی کی ڈیمانڈ بڑھنے سے مجموعی ڈیمانڈ بڑھ کر 19 ہزارمیگاواٹ کے قریب پہنچ گئی ہے ۔ این ٹی ڈی سی کے ذرائع کے مطابق گزشتہ روز رات کے وقت ملک میں بجلی کی مجموعی ڈیمانڈ 18900 میگاواٹ جبکہ پیداوار 12400 میگاواٹ رہی طلب و رسد میں 6500 میگاواٹ کا فر ق رہا جس کے باعث شہروں میں دس سے بارہ گھنٹے جبکہ دیہی علاقوں میں چودہ سے پندرہ گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی گئی جبکہ کم ریکوری والے علاقوں میں دوراینہ اٹھارہ گھنٹے تک بھی رکھا گیا ۔

مزید :

صفحہ آخر -