بجٹ میں صنعتکاروں کو ریلیف دیا جائے، زرعی شعبہ میں اصلاحات لائی جائیں: افتخار ملک

بجٹ میں صنعتکاروں کو ریلیف دیا جائے، زرعی شعبہ میں اصلاحات لائی جائیں: ...
 بجٹ میں صنعتکاروں کو ریلیف دیا جائے، زرعی شعبہ میں اصلاحات لائی جائیں: افتخار ملک

  

لاہور(اسد اقبال)سارک چیمبر آف کامر س اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر اور یو نائیٹڈ بزنس گروپ (UBG)کے چیئر مین افتخار علی ملک نے وفاقی حکو مت سے مطالبہ کیا ہے کہ آ ئندہ مالی سال کے بجٹ برائے 2017-2018میں توانائی بحران کو ختم کر نے کے لیے تھنک ٹینک اقدامات کو جلد تکمیل کر تے ہوئے قوم کو لوڈشیڈنگ سے نجات دلاکرصنعتی ومعاشی خوشحالی کی راہ پر گامزان کرنے میں کلیدی کردار ادا کرے۔جبکہ ایکسپورٹ کی شرح میں اضا فے کے لیے صنعتکاروں کو ریلیف دیتے ہوئے زرعی شعبہ میں اصلا حات لائے اور فیڈریشن و چیمبر زکی جانب سے بجٹ تجاویز کو بجٹ کا حصہ بنایا جائے ۔جس سے معیشت کا پہیہ رواں اور ملک میں بے روزگاری کا خاتمہ ہو نے سے ملک میں ترقی و خو شحالی کا انقلاب آئے گا۔ان خیالا ت کا اظہار انھو ں نے گزشتہ روز "پاکستان بجٹ تجاویز" میں کیا ۔ افتخار ملک نے کہا کہ صنعتکاروں اور تاجروں کو آئندہ مالی سال کے بجٹ میں حکو مت وقت سے بہت سی تو قعات وابستہ ہیں ۔ملکی معیشت کوسنبھا لا دینے کے لیے اولین تر جیح بجلی بحران کو ختم کر نا ہے ۔توانائی بحران کو ختم کرنے کے لیے چھوٹے ڈیموں کی فوری تعمیر کا اعلان کیا جائے۔ سرکاری محکموں میں بجلی کا استعمال کم کرایا جائے۔ کم قیمت بجلی کے پیداواری منصوبوں کی شاٹ ٹرم اور لونگ ٹرم حکمت عملی بنائی جائے اور کرپشن پر قابو پانے کے لیے خصوصی ٹاسک فورس بنائی جائے ۔

مزید :

صفحہ آخر -