ڈیجیٹل یوتھ سمٹ لے انعقاد سے صوبے کی معیشت کو مضبوط بنیادیں فراہم ہوں گی:شہرام ترکئی

ڈیجیٹل یوتھ سمٹ لے انعقاد سے صوبے کی معیشت کو مضبوط بنیادیں فراہم ہوں ...

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے سینئر وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی شہرام خان تراکئی نے ڈیجیٹل یوتھ سمٹ کے انعقاد کو صوبے کے نوجوانوں کی صلاحیتوں کو بین الاقوامی سطح پر اجاگر کرنے اور انہیں روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کرنے کے لئے موجودہ صوبائی حکومت کی طرف سے ایک اہم قدم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بین الاقوامی معیار کا یہ سمٹ صوبے کے نوجوانوں کو اپنے اندر چھپی ہوئی صلاحیتوں کو سامنے لانے اور انہیں کامیاب کاروبار کی شکل دینے کے لئے ایک موثر پلیٹ فارم فراہم کرتا ہے جس میں نوجوان دنیا بھر کی مشہور و معروف آئی ٹی کمپنیوں کے نمائندوں اور آئی ٹی ماہرین کے تجربات سے استفادہ کرتے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کے روز پشاور میں تین روزہ ڈیجیٹل یوتھ سمٹ2017کی افتتاحی تقریب سے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کے موثر استعمال کے ذریعے صوبے کے نوجوانوں کو با اختیار بنانے کیلئے نتیجہ خیز اقدامات کر رہی ہے اور ڈیجیٹل یوتھ سمٹ کا انعقاد انہی اقدامات کے سلسلے کی ایک کڑی ہے جس میں دنیا بھر کے آئی ٹی ماہرین اور کمپنیوں کو ایک چھت تلے جمع کیا گیا ہے تاکہ ان کے کامیاب تجربات سے استفادہ کرتے ہوئے ہمارے نوجوان نہ صرف اپنی تخلیقی صلاحیتوں کو اجاگر کر سکیں بلکہ وہ قومی اور بین الاقوامی مارکیٹ میں باعزت روزگار حاصل کرنے کے بھی قابل ہو سکیں۔انفارمیشن ٹیکنالوجی کو آجکل کے دور میں ناگزیر قرار دیتے ہوئے سینئر صوبائی وزیر نے کہا کہ اس شعبے کے موثر اور بامقصد استعمال کے بغیر موجودہ دور میں قومی ترقی نا ممکن ہے۔ آج کل پوری دنیا کی معیشت ڈیجیٹل اکانومی کی طرف بڑھ رہی ہے اسی لئے موجودہ صوبائی حکومت عصر جدید کے ان تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے صوبے میں آئی ٹی کے شعبے کے فروغ اور نوجوانوں کو اس شعبے میں مہارت دلانے کے لئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کر رہی ہے جن میں ڈیجیٹل یوتھ سمٹ کے انعقاد کے علاوہ سوک ہکاتھان،ارلی ایج کمپیوٹر پروگرامنگ،ویمن ایمپاورمنٹ پروگرام،انوکیوبیشن سنٹرز کا قیام،آئی ٹی پارکس کا قیام،فری لانسنگ پروگرام اور دیگر متعدد منصوبے شامل ہیں جن کے نتیجے میں بہت جلد آئی ٹی حب میں تبدیل ہو جائے گا اور صوبے کی معیشت کو مضبوط بنیادیں فراہم ہوں گی۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ پشاور کے قریب رشکئی کے مقام پر بین الاقوامی طرز کے ایک ٹیکنالوجی سٹی کے قیام کے لئے ایک چینی کمپنی کے ساتھ مفاہمت کی یاداشت پر حال ہی میں دستخط کئے گئے ہیں جس کے قیام سے آئی ٹی کے شعبے کی مصنوعات مقامی سطح پر تیار کی جا سکیں گی۔پشاور میں ڈیجیٹل یوتھ سمٹ کے انعقاد کو صوبے کے نوجوانوں کے لئے ایک نادر اور سنہرا موقع قرار دیتے ہوئے صوبائی وزیر نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ اس میں بھرپور شرکت کریں اور اس موقع سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھائیں۔اس موقع پر جاز موبائل کمپنی اور خیبر پختونخوا انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے درمیان صوبے میں آئی ٹی کے فروغ کے سلسلے میں مفاہمت کی ایک یاداشت پر بھی دستخط کئے گئے۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -