پنجاب اسمبلی : اپوزیشن کی طرف سے مفاد عامہ کی مختلف تحاریک التوا ‘قراردادیں جمع

پنجاب اسمبلی : اپوزیشن کی طرف سے مفاد عامہ کی مختلف تحاریک التوا ‘قراردادیں ...

  

لاہور( نمائندہ خصوصی) پنجاب اسمبلی کے سیکرٹریٹ میں اپوزیشن کی طرف سے مفاد عامہ سے متعلق مختلف تحاریک التوائے کار اور قرار دادیں جمع کروادی گئی ہیں ۔پہلی تحریک التواء مسلم لیگ (ق) کے رکن عامر سلطان چیمہ کی طرف سے جمع کروائی گئی ہے جس کے متن میں کہا گیا ہے کہ محمود بوٹی کی سائٹ انسانی زندگی کے لیے خطرہ بن گئی ‘زہریلے مادے خارج کرتے کوڑے کے پہاڑ ماحولیات اور انسانی زندگی کے لیے شدید خطرہ بن چکے ہیں۔ علاقہ ہر وقت شدید تعفن کی لپیٹ میں رہتا ہے بدبو کی (بقیہ نمبر76صفحہ12پر )

شدت سے اہل علاقہ کھانا تک نہیں کھا سکتے۔دوسری جانب پرائیوٹ سکولوں میں تین ماہ کی اکھٹی فیسیں وصول کرنے کے خلاف پنجاب اسمبلی میں ایک قرارداد جمع کروائی گئی یہ قرارداد تحریک انصاف کے ملک تیمور مسعود کی جانب سے جمع کروائی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پرائیویٹ سکول مالکان نے عدالتی احکامات ہوا میں اڑا دئیے ہیں سکول 3 ماہ کی چھٹیوں کی فیس وصول کرنے میں مصروف ہیں جس سے طلباء اور والدین میں شدید تشویش پائی جاتی ہے ۔قرارداد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ تمام پرائیویٹ سکول مالکان کو پابند کیا جائے کہ وہ چھٹیوں کی فیسیں لینے کا سلسلہ بند کریں جو خلاف ورزی کرے اس سکول کو نہ صرف بند کیا جائے بلکہ انھیں بھاری جرمانے بھی کئے جائیں۔پنجاب اسمبلی میں ایک اور قرارداد تحریک انصاف کے احمد خان بھچر کی جانب سے جمع کروائی گئی ہے جس میں کارخانوں میں عرصہ دراز سے لگائی گئی مشینری خستہ حال اور زنگ آلود ہو چکی ہے انتظامیہ نے آنکھیں موند لیں کوئی پوچھنے والا نہیں آلودہ ماحول اور غیر معیاری طریقے سے برف تیار کی جا رہی ہے۔برف میں استعمال ہونے والے پانی میں تیزابیت کی بھرپور مقدار سے عوام میں بیماریاں پھیل رہی ہیں ۔قرارداد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ ان کارخانوں کے خلاف سخت کارروائی کرے ۔ تحریک انصاف کے ملک تیمور مسعود کی جانب سے جمع کروائی گئی قرار داد میں لاہور، راولپنڈی، سرگودھا اور سیالکوٹ سے لیے گئے نموناجات میں سنکھیا کی مقدار زیادہ پائی گئی نمونہ جات میں 10 کمپنیوں کے برانڈ انتہائی آلودہ نکلے‘ پانی میں سنکھیا کی زیادہ مقدار انسانی صحت کے لیے مضر ہے قرارداد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ مضر صحت منرل واٹر تیار کرنے والوں کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کی جائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -