افغان فوج نے کسی اور کے اشارے پر پاکستان میں حملہ کیا : چوہدری نثار

افغان فوج نے کسی اور کے اشارے پر پاکستان میں حملہ کیا : چوہدری نثار
افغان فوج نے کسی اور کے اشارے پر پاکستان میں حملہ کیا : چوہدری نثار

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ افغان سیکیورٹی ایجنسیز سے اپنا ملک سنبھلتا نہیں، پاکستان کے معصوم شہریوں پر گولہ باری کر کے غلط روایت قائم کی، پاک فوج اور ایف سی کے فوری اور مئوثر  جواب نے کسی اور کے اشارے پر افغان فورسز کی جانب سے کی گئی کارروائی کو بھاری نقصان سے غیر مﺅثر بنا دیا۔ ترجمان وزارت داخلہ کے مطابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان ے آئی جی ایف سی بلوچستان میجر جنرل ندیم احمد انجم سے ٹیلیفونک رابطہ کیا۔

دھرنے والے جہاں کھڑے تھے اب اس مقام پر نہیں رہے:خواجہ آصف

گفتگو کے دوران آئی جی ایف سی نے وزیر داخلہ کو چمن واقعے پر بریفنگ دی اور بتایا کہ واقعہ مردم شماری میں مصروف ہماری سیکیورٹی فورسز پر بلا جواز گولہ باری سے شروع ہوا۔ وزیر داخلہ نے واقعے میں پاک فوج اور ایف سی کے 2 جوانوں کی شہادت پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ چوہدری نثار علی نے کہا کہ افغان حکومت کی سیکیورٹی ایجنسیز سے اپنا ملک سنبھلتا نہیں، آج انہوں نے پاکستان کے معصوم شہریوں پر گولہ باری کر کے انتہائی غلط روایت قائم کی۔ پاک فوج اور ایف سی کے مثبت اور دلیرانہ ردعمل سے آئندہ سرحد کے اس پار سے ایسی روش کی حوصلہ شکنی ہو گی۔انہوں نے کہا کہ پاک فوج اور ایف سی کے فوری اور موثر جواب نے کسی اور کے اشارے پر افغان فورسز کی جانب سے کی گئی کارروائی کو بھاری نقصان سے غیر مئوثر بنا دیا ۔

واضح رہے کہ افغان فورسز نے چمن کے علاقے میں بھاری گولہ باری کر کے 9 پاکستانیوں کو شہید اور 45 کو زخمی کر دیا تھا۔ پاکستان کی جانب سے بھرپور جواب کارروائی نے دشمن ملکوں کے ہاتھوں کٹھ پتلی بنی افغان فورسز کو بلوں میں گھسنے پر مجبور کر دیا۔

مزید :

اسلام آباد -