پی آئی اے کو ماہانہ 3 ارب 25 کروڑ روپے خسارے کا سامنا

پی آئی اے کو ماہانہ 3 ارب 25 کروڑ روپے خسارے کا سامنا
پی آئی اے کو ماہانہ 3 ارب 25 کروڑ روپے خسارے کا سامنا

  

کراچی (این این آئی)پی آئی اے کے قائمقام چیف ایگزیکٹو آفیسر نیر حیات نے کہا ہے کہ پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن کو گزشتہ سال ماہانہ سوا3ارب روپے خسارے کا سامنا رہا جبکہ بینکوں سے لیے گئے قرضے اور سود کی ادائیگیوں کے باعث بھی ایئرلائن کومالی مشکلات رہیں۔حج آپریشن کے لیے مزید طیارے لیزپر حاصل کیے جائیں گے تاہم حج آپریشن کے لیے تیاریاں جاری ہیں۔

گزشتہ روزیہاں پی آئی اے ہیڈآفس میں میڈیا سے بات چیت میں نیر حیات نے کہا کہ پی آئی اے کا خسارہ ماضی کے قرضوں اور خلیجی ایئرلائنوں کی وجہ سے ہورہا ہے، پی آئی اے ایک منزل سے دوسری منزل کے لیے پروازیں چلاتی ہے، خلیجی ایئرلائین مسافروں کو پوائنٹ سے منزل کے فارمولے پرآپریٹ کرتی ہیں۔ انھوں نے کہاکہ خلیجی ایئرلائینوں سے پی آئی اے کو پہنچنے والے نقصان سے حکومت کو آگاہ کردیا گیا ہے.

اوپن مارکیٹ میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت 106 روپے 20 پیسے ہوگئی

انھوں نے مزید کہا کہ پی آئی اے کے امریکا اور یورپ کے لیے روٹس خسارے میں چل رہے ہیں تاہم پی آئی اے کے آپریٹنگ ماڈل کو تبدیل کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔قائم مقام چیف ایگزیکٹونے کہا کہ پی آئی اے کو پورپی ممالک کے متعدد روٹس پرخسارے کا سامنا کرنا پڑرہا ہے تاہم ادارے کو انتظامی طورپر بہتر انداز میں چلانے کے لیے ٹھوس حکمت عملی بھی تیار کی گئی ہے۔

مزید :

بزنس -