”میری بیوی پردہ نہیں کرتی کیونکہ یہ ۔۔۔“سعودی عرب کے معروف عالم دین نے ایسا انکشاف کردیا کہ سعودی شہری حیرت سے ایک دوسرے کا منہ دیکھنے لگے

”میری بیوی پردہ نہیں کرتی کیونکہ یہ ۔۔۔“سعودی عرب کے معروف عالم دین نے ایسا ...
”میری بیوی پردہ نہیں کرتی کیونکہ یہ ۔۔۔“سعودی عرب کے معروف عالم دین نے ایسا انکشاف کردیا کہ سعودی شہری حیرت سے ایک دوسرے کا منہ دیکھنے لگے

  

ریاض (ڈیلی پاکستان آن لائن )سعودی عرب کے معروف عالم دین اور ان کی اہلیہ نے بتدریج پر تشدد خیالات ترک کرکے اعتدال پسندانہ طرز فکر اپنالیا۔الشیخ ڈاکٹر احمد الغامدی نے بتدریج اپنے شدت پسندانہ نظریات تبدیل کیے اور ان کی اہلیہ نے چہرے کا نقاب ترک کیا۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ سے خصوصی گفتگو میں الشیخ احمد الغامدی سے پوچھا گیا کہ آپ کی طرح آپ کی اہلیہ کے طرز زندگی اور فکرمیں بھی غیرمعمولی تبدیلی آئی، انہوں نے چہرے کا نقاب ترک کرنے کے ساتھ ساتھ ہتھیلیوں کو بھی کھلا رکھنا شروع کیا، آپ کے خیال میں چہرے کا کھلا رکھنے کا شرعی جواز موجود ہے؟اس پر الغامدی نے کہا کہ میری اہلیہ صاحب علم شخصیت ہیں۔ وہ اچھی طرح جانتی ہیں کہ اسلام کی شرعی حدود کیا ہیں؟ اسلامی پردے اور نقاب وحجاب کی قیود کس حد تک ہیں۔ جب ہم دونوں میاں بیوی گھر سے باہر نکلتے ہیں تو وہ چہرے کا نقاب نہیں کرتی اور میں نے بھی اسے کبھی ایسا کرنے سے منع نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ جمہور علماء چہرے کو کھلا رکھنے کی اجازت دیتے ہیں۔ میرا ذاتی خیال یہ ہے کہ خواتین پر زبردستی حجاب مسلط کرنے کے بجائے انہیں خود اس کا فیصلہ کرنےکا موقع دینا چاہیے۔ اس سے خواتین میں خود اعتمادی پیدا ہوگی اور غور فکر کے کئی دریچے کھلیں گے۔

سعودی عرب کے بانی شاہ عبدالعزیز کی جانب سے 100 سال قبل کی جانے والی وہ پیشنگوئی جو آج حرف بہ حرف سچ ثابت ہوئی

مزید :

عرب دنیا -