وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف کی اہلیہ قبضہ مافیہ گروہ میں شامل ،معروف اینکر پرسن نے تہلکہ خیز انکشاف کردیا ،قبضہ کیسے کیا ؟طریقہ کار جان کر آپ بھی چکرا جائیں گے

وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف کی اہلیہ قبضہ مافیہ گروہ میں شامل ،معروف اینکر ...

  

سیالکوٹ (ڈیلی پاکستان آن لائن ) معروف اینکر پرسن مبشر لقمان دعویٰ کیا ہے کہ وزیر پانی و بجلی کی اہلیہ مسرت آصف خواجہ ،میئر سیالکوٹ توحید اختر چوہدری اور ان کے تین بھائیوں نے شہر کی رئیل اسٹیٹ پر قبضہ کر لیا ہے اور بغیر اپروول کے کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی کے نام سے غیر قانونی تعمیرات جاری ہیں ۔

نجی نیوز چینل میں گفتگو کرتے ہوئے مبشر لقمان  کا کہنا تھا کہ میئر سیالکوٹ کا کوئی سیاسی پس منظر نہیں ہے ،انہیں میئر بنانے کے عوض کمیشن ملا ہو گا ،خواجہ آصف بتائیں کے ان کے پاس سوسائٹی بنانے کے لیے اتنا سرمایہ کہاں سے آیا؟ ۔اینکر پرسن نے کہا کہ 12 اپریل 2016 کو خواجہ آصف کی اہلیہ نے میئر سیالکوٹ اور ان کے تین بھائیوں زاہد محمود ،نوید اختر اور چوہدری شاہد مقبول کے ساتھ مل کر کینٹ ہاوسنگ کی پارٹنر شپ بنائی اوراس کا ہیڈ آفس ہاوس نمبر 156وائے 115فیز تھری ڈی ایچ اے میں ظاہر کیا گیا ۔انہوں نے کہا قبضہ مافیہ نے سیالکوٹ میں موضع لنگڑیال اور موضع اورواق میں کینٹ ہاوسنگ سوسائٹی کے نام سے سوسائٹی بنانے کے لیے ٹی ایم او سیالکوٹ سے  اجازت نامہ حاصل کیے بغیر تعمیرات شروع کردی گئی،اس مقصد کے لیے خواجہ آصف کی اہلیہ نے بینک آف پنجاب میں رقم بھی جمع کرائی اوراس سوسائٹی کے لیے 114گھروں کا نقشہ بنا یا گیا ۔

مبشر لقمان کا کہنا تھا کہ قبضہ مافیا نے پٹورایوں کے ساتھ مل کر اس کالونی کے لیے 97کینال اور 18مرلے اراضی کا این او سی بھی حاصل کیا جس میں لکھوایا گیا کہ اس کالونی کے مالکان موضع لنگڑیال میں 97کینا ل اور18مرلے کے مالک ہیں، رقبے میں راستہ اور  شاہراہ عام کوئی  نہیں ہے ۔انہوں نے مزید بتا یا کہ این او سی کے مطابق ایک شاہراہ یہاں موجود ہے اسے بھی رقبے میں شامل کیا گیا ۔ایک عرصے سے قائم سڑک پر تعمیرات کا منصوبہ بنا یا گیا ،جن لوگوں نے یہاں اپنی زمینیں بیچنے سے انکار کیا ،ان کی زمینوں پر قبضے کر کے تعمیرات کا کام شروع کردیا گیا ،پلاٹس کی خرید و فروخت اب بھی جاری ہے ۔

بھارت نے غلطی سے سرحد پار کرنے والے کشمیری بچے پر جاسوسی کا الزام عائد کر دیا

مزید :

قومی -