’جو مرد انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھتے ہیں انہیں ان کا دماغ اس بات پر مجبور کردیتا ہے کہ۔۔۔‘ ماہرین نے فحش فلموں کا سب سے خطرناک نقصان بتادیا، جان کر ہر کوئی بے اختیار توبہ پر مجبور ہوجائے

’جو مرد انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھتے ہیں انہیں ان کا دماغ اس بات پر مجبور ...
’جو مرد انٹرنیٹ پر فحش فلمیں دیکھتے ہیں انہیں ان کا دماغ اس بات پر مجبور کردیتا ہے کہ۔۔۔‘ ماہرین نے فحش فلموں کا سب سے خطرناک نقصان بتادیا، جان کر ہر کوئی بے اختیار توبہ پر مجبور ہوجائے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) انٹرنیٹ پر فحش فلموں کی بھرمار نوجوان نسل کے لیے زہرقاتل ثابت ہو رہی ہے۔اب ماہرین نے اس عادتِ بد کے متعلق انتہائی تشویشناک انکشاف کر دیا ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق فحش مواد دیکھنے کی لت میں مبتلا افراد کو علاج کی سہولت فراہم کرنے والی آرگنائزیشن StopSOکے ماہرین کا کہنا ہے کہ ”منشیات کی لت بتدریج شدید ہوتی جاتی ہے اور بالآخر اس لت میں مبتلا افراد بچوں سے متعلق جنسی مواد دیکھنے لگتے ہیں۔“آرگنائزیشن کی سربراہ جولیٹ گریسن کا کہنا تھا کہ ”فحش مواد کی لت بھی نشے کی لت کی طرح ہوتی ہے۔ وقت کے ساتھ ساتھ اس کی طلب میں بڑھتی جاتی ہے اور انجام کار اس لت میں مبتلا شخص کا دماغ اسے بچوں کی قابل اعتراض ویڈیو ز اور تصاویر دیکھنے پر مجبور کر دیتا ہے۔“

’میں 30 سال سے فحش فلمیں دیکھنے کی لت میں مبتلا تھا، بالآخر چھوڑنے کا فیصلہ کیا اور یہ کام کرتے ہی سب سے بڑی تبدیلی یہ آئی کہ میں اب۔۔۔‘ آدمی نے ایسی بات کہہ دی کہ جان کر آپ بھی توبہ پر مجبور ہوجائیں

جولیٹ گریسن کا مزید کہنا تھا کہ ”فحش مواد کی لت میں مبتلا افراد آہستہ آہستہ درست اور غلط کی تفریق کرنے کی صلاحیت کھو دیتے ہیں۔ ایک وقت میں جس طرح کا فحش مواد ان لوگوں کو مطمئن کر رہا ہوتا ہے کچھ عرصہ بعد وہ انہیں اطمینان نہیں دیتا اور یہ اس بڑھ کر کچھ دیکھنے کی طلب کرتے ہیں۔ یہ بالکل ایسے ہی ہوتا ہے جیسے شراب کے عادی شخص کے ساتھ ہوتا ہے۔ پہلے اسے تھوڑی مقدار بھی مطمئن کرتی ہے لیکن بتدریج اس مقدار میں اضافہ ہوتا جاتا ہے کیونکہ کم مقدار اس شخص کو سکون نہیں دیتی۔ انٹرنیٹ کی فراوانی سے قبل لوگوں کی فحش مواد تک رسائی انتہائی مشکل تھی لیکن اب یہ انتہائی آسان ہو گئی ہے جس کی وجہ سے اس لت میں مبتلا افراد کی تعداد میں ہوشربا اضافہ ہو رہا ہے۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -