22 سال قبل قتل ہونے والے 7 سالہ بچے کے دل نے بالآخر دھڑکنا بند کردیا

22 سال قبل قتل ہونے والے 7 سالہ بچے کے دل نے بالآخر دھڑکنا بند کردیا
22 سال قبل قتل ہونے والے 7 سالہ بچے کے دل نے بالآخر دھڑکنا بند کردیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) بائیس سال قبل اٹلی میں قتل ہونے والے 7سالہ بچے کے دل نے بھی بالآخر گزشتہ روز دھڑکنا بند کر دیا۔ آپ سوچ رہے ہوں گے کہ دل اتنا عرصہ کیسے دھڑکتا رہا؟ یہ ایک ایسا واقعہ ہے کہ جان کر آپ کی آنکھیں بھی نم ہو جائیں گی۔میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق واقعہ کچھ یوں ہے کہ 1994ءمیں نکولس گرین نامی یہ بچہ اپنے ماں باپ کے ہمراہ چھٹیاں منانے اٹلی گیا۔ وہاں یہ فیملی کار میں سفر کر رہی تھی کہ ڈاکوﺅں نے ان کی کار کو روکنے کی کوشش کی لیکن نکولس کے والد نے گاڑی بھگا لیجانے کی کوشش کی جس پر ڈاکوﺅں نے فائرنگ کر دی۔

30 بچے بچیوں سے جنسی زیادتی کرکے انہیں ایڈز کا مریض بنانے والے شخص کو معاف کردیا گیا، ایسی خبر آگئی کہ دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا

ڈاکو ﺅں کو دراصل مخبری ہوئی تھی کہ ایک گاڑی میں زیورات لیجائے جا رہے ہیں۔ انہوں نے غلطی سے گرین فیملی کی گاڑی کو وہ گاڑی سمجھ لیاتھا۔ واقعے کے وقت نکولس گاڑی کی پچھلی سیٹ پر سو رہا تھا۔ ایک گولی اس کے سر میں لگی اور وہ نیند میں ہی جہان فانی سے کوچ کر گیا۔ اس کا والد گاڑی بھگاتا رہا۔ وہ سمجھ رہے تھے کہ نکولس زخمی ہوا ہے۔ کافی دور ایک سڑک پر انہیں ایک ایمبولینس نظر آئی جو کسی ٹریفک حادثے میں زخمی ہونے والے افراد کو لینے آئی تھی۔ وہاں اس نے گاڑی روک دی اور اپنے بیٹے کی طبی امداد کو کہا۔ طبی عملے نے نکولس کو چیک کیا تو اس کی موت کی تصدیق کر دی۔

رپورٹ کے مطابق نکولس کے دل گرفتہ والدین نے اس کے اعضاءاٹلی میں ہی عطیہ کرنے کا فیصلہ کیا اور اس کا دل 15سالہ اینڈری مونگیاردو نامی لڑکے کو دے دیا گیا جو دل کے عارضے میں مبتلا تھا اور اس کا دل ٹرانسپلانٹ کیاجانا تھا۔ چنانچہ نکولس کا دل اسے لگا دیا گیا، جس سے اسے 22سال مزید زندگی مل گئی۔ گزشتہ دنوں 22سال بعد اینڈری کی بھی موت واقع ہو گئی ہے جس سے نکولس کے دل کی دھڑکن بھی رک گئی ہے۔واضح رہے کہ نکولس کے والدین نے صرف اس کا دل ہی عطیہ نہیں کیا تھا بلکہ اس کی آنکھیں اور دیگر اعضاءبھی عطیہ کر دیئے تھے جن سے اینڈری کے ساتھ ساتھ سات دیگر بچے بھی مستفید ہوئے تھے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -