دنیا کا وہ ملک جہاں 24 سال بعد پہلی مرتبہ امریکی فوجی مارا گیا

دنیا کا وہ ملک جہاں 24 سال بعد پہلی مرتبہ امریکی فوجی مارا گیا
دنیا کا وہ ملک جہاں 24 سال بعد پہلی مرتبہ امریکی فوجی مارا گیا

  

موغادیشو(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ نے 1993ءکے بعد پہلی بار گزشتہ دنوں اپنی فوج صومالیہ بھیجی تھی جس کا مقصد صومالی فوج کی تربیت کرنا ہے۔ گزشتہ روز ایک حملے میں اس کے ایک فوجی کی ہلاکت ہو گئی ہے جو صومالیہ میں 24سال بعد پہلے امریکی فوجی کی ہلاکت ہے۔ ای این این کی رپورٹ کے مطابق 1993ءمیں صومالیہ میں امریکی فوج کے دو بلیک ہاک ہیلی کاپٹر مار گرائے گئے تھے اور 18امریکی فوجیوں کو قتل کرکے ان کی لاشیں دارالحکومت موغادیشو کی سڑکوں پر گھسیٹی گئی تھیں۔ اس واقعے کے بعد 1994ءمیں امریکہ نے اپنی فوج صومالیہ سے نکال لی تھی لیکن گزشتہ دنوں ڈونلڈٹرمپ نے دوبارہ فوج کو وہاں بھیج دیا۔

’ہم تمہاری فوج پر بم برسادیں گے اگر۔۔۔‘ ترکی کھل کر میدان میں آگیا، امریکہ کو وہ خوفناک ترین دھمکی دے دی جس کی جرا¿ت دنیا کے کسی اور ملک میں نہیں

امریکی فوج کی افریقی کمانڈر نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ ”حملے میں ایک امریکی فوجی ہلاک جبکہ دو زخمی ہوئے ہیں۔یہ ہلاکت موغادیشو سے مغرب میں 40میل کے فاصلے پر القاعدہ کی ذیلی شدت پسند تنظیم شباب کے خلاف آپریشن کے دوران ہوئی۔زخمی ہونے والوں میں ایک مترجم بھی شامل ہے جو امریکی شہری ہی ہے۔ ان فوجیوں پر شدت پسندوں نے چھوٹے ہتھیاروں سے حملہ کیا۔“واضح رہے کہ امریکہ مزید فوج صومالیہ بھیجنے کی منصوبہ بندی بھی کر رہا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -