’ساری جائیداد بیچ کر میں پاکستان سے پیدل ایران گیا اور وہاں سے کشتی پر سوار ہوکر اومان آیا لیکن یہاں آکر پتہ چلا کہ یہ زندگی کی سب سے بڑی غلطی تھی کیونکہ۔۔۔‘ بہتر مستقبل کیلئے عرب ملک جانے والے پاکستانی نے ایسی بات بتادی کہ سن کر ہر پاکستانی کی آنکھوں میں آنسو آجائیں

’ساری جائیداد بیچ کر میں پاکستان سے پیدل ایران گیا اور وہاں سے کشتی پر سوار ...
’ساری جائیداد بیچ کر میں پاکستان سے پیدل ایران گیا اور وہاں سے کشتی پر سوار ہوکر اومان آیا لیکن یہاں آکر پتہ چلا کہ یہ زندگی کی سب سے بڑی غلطی تھی کیونکہ۔۔۔‘ بہتر مستقبل کیلئے عرب ملک جانے والے پاکستانی نے ایسی بات بتادی کہ سن کر ہر پاکستانی کی آنکھوں میں آنسو آجائیں

  

مسقط (مانیٹرنگ ڈیسک) احمد رشید ان بدقسمت پاکستانی شہریوں میں سے ایک ہیں جو سہانے خوابوں کے تعاقب میں غیر قانونی طریقوں سے عرب ممالک چلے جاتے ہیں لیکن وہاں بھیانک حالات ان کے منتظر ہوتے ہیں۔ وہ ایک سال قبل اومان میں غیر قانونی طور پر داخل ہوا لیکن ایسی مصیبت میں پھنسا کہ اب واپسی کے لئے بے تاب ہے۔

گلف نیوز سے بات کرتے ہوئے احمد نے کہا ”میں نے اپنے گھر والوں کا پیٹ پالنے کیلئے اپنی زندگی خطرے میں ڈالی۔ میں اپنی ساری جائدار بیچ کر ایک ایجنٹ کی مدد سے غیر قانونی طور پر پیدل ایران گیا، جہاں سے بذریعہ کشتی اومان پہنچا۔ ہمیں کئی افراد کو ایک کشتی میں بھر کر اومان لایا گیا جس میں ہم تین دن تک ایک اندھیرے کمرے میں بند رہے۔ دو افراد راستے میں ہی مر گئے اور ان کی لاشیں سمندر میں پھینک دی گئیں۔“

سعودی شہری نے ڈونلڈ ٹرمپ سے متاثر ہو کر اپنی بیٹی کا نام ”ایوانکا “رکھ لیا

احمد کا کہنا ہے کہ غیر قانونی ہونے کی وجہ سے وہ بہت کم رقم کماپاتا ہے اور ماہانہ 50 ریال بمشکل اپنے گھربھیج سکتا ہے ۔ا سے آٹھ دیگر افراد کے ساتھ ایک کمرے میں قیام کرنا پڑرہا ہے، جس کا کرایہ وہ 10 ریال ماہانہ ادا کرتاہے۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان کے علاوہ ایران، یمن، بھارت، بنگلہ دیش، صومالیہ اور افغانستان سے آنے والے غیر قانونی افراد بھی اومان میں موجود ہیں۔ ان کی اکثریت کنسٹرکشن کے شعبے میں یومیہ 8 ریال پر کام کرتی ہے۔ احمد کا کہنا ہے کہ وہ غیر قانونی طریقے سے اومان آکر بہت پچھتارہا ہے۔ اسے اکثر فاقوں کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے اور زندگی بے حد مشکل سے کٹ رہی ہے۔ وہ اپنے شب و روز اسی امید پر گزار رہا ہے کہ ایک دن واپس پاکستان جا سکے گا۔

مزید :

عرب دنیا -