پشاور میں تحریک انصاف کے سربراہ کی موجودگی میں نوجوانوں کے ’’رو عمران رو ‘‘ کے نعرے ،آگے سے عمران خان نے کیا کیا؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کر دے گا

پشاور میں تحریک انصاف کے سربراہ کی موجودگی میں نوجوانوں کے ’’رو عمران رو ...
پشاور میں تحریک انصاف کے سربراہ کی موجودگی میں نوجوانوں کے ’’رو عمران رو ‘‘ کے نعرے ،آگے سے عمران خان نے کیا کیا؟ جواب آپ کے تمام اندازے غلط ثابت کر دے گا

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف حکومت کے خلاف چلائی جانے والی تحریک میں وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف گذشتہ چار سالوں سے منعقد ہونے والے جلسوں میں ’’گو نواز گو ‘‘ کے نعرے بڑے زور و شور سے لگا رہی ہے جبکہ پی ٹی آئی کے رد عمل میں مسلم لیگ نون نے بھی ’’رو عمران رو ‘‘ کا نعرہ متعارف کروایا اور لیگی ورکرز بھی اس نعرے کو گلی کوچوں میں بلند کرتے نظر آتے ہیں ،لیکن آج  پشاور میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی موجودگی میں نوجوانوں نے ’’رو عمران رو ‘‘ کے نعرے بلند کر کے ’’ کپتان ‘‘کو  حیران کر دیا ،نعروں کے شور میں عمران خان نے اپنے دونوں ہاتھ کانوں پر رکھ لئے مگر انتظامیہ کی تمام تر کوششوں کے باوجود ’’رو عمران رو ‘‘ کے فلک شگاف  نعروں  کی صدا بند نہ ہو سکی ۔

نجی ٹی وی چینل ’’کپیٹل ٹی وی‘‘ کے مطابق پشاور میں منقعدہ ’’ڈیجیٹل یوتھ سمٹ ‘‘ کی تقریب میں اس وقت دلچسپ صورتحال پیدا ہو گئی جب تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اور خیبر پختونخوا  کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک  کی موجودگی میں تقریب میں شامل ہونے والے نوجوانوں کے ایک گروپ نے گو نواز گو کے نعرے لگائے تو وہاں موجود طلبا کے  ایک دوسرے  گروپ نے ’’رو عمران رو ‘‘ کے نعرے لگانے شروع کر دیئے ،جس پر دونوں گروپوں میں ان نعروں کا ’’مقابلہ ‘‘ شروع ہو گیا اور کان پڑی آواز بھی سنائی نہ دی ،اس موقع پر تقریب کے منتظمین نے کافی کوشش کی کہ ’’نعرے بازی کا یہ مقابلہ ‘‘ بند ہو لیکن انہیں اس میں کامیابی حاصل نہ ہو سکی ۔رو عمران رو کے  نعروں کے شور میں تحریک انصاف کے چیئرمین نعرے لگانے والے نوجوانوں کی طرف منہ کر کے کھڑے ہوئے تو ان نعرے لگانے والے نوجوانوں نے اپنے نعروں کی شدت میں مزید اضافہ کر دیا جس پر عمران خان کانوں پر ہاتھ رکھتے ہوئے اپنی سیٹ پر بیٹھ گئے اور ’’رو عمران رو ‘‘ کے نعرے سنتے رہے  ۔بعد ازاں جب ان نعروں کی گونج تھمی تو تقریب کا باقاعدہ آغاز ہوا اور عمران خان نے اس تقریب سے خطاب بھی کیا ۔واضح رہے کہ اس تقریب میں میڈیا  کو ہال میں  جانے  کی اجازت نہ ملنے پر صحافیوں نے بھی شدید احتجاج کرتے ہوئے تقریب کا بائیکاٹ کر دیا تھا ۔  

واضح رہے کہ اس سے قبل مسلم لیگ نون کے کئی وفاقی وزرا کی موجودگی میں بھی ’’گو نواز گو‘‘ کے نعرے لگ چکے ہیں جس پر لیگی وزرا  کے غصے میں آتے ہوئے تقریب ادھوری چھوڑ کر جانے کی خبریں بھی منظر عام پر آ چکی ہیں جبکہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کی ریلوے سٹیڈیم لاہور میں گو نواز گو کا نعرہ لگانے والے کراچی کے 5  طلبا کو تو گرفتار بھی کر لیا گیا تھا جنہیں بعد ازاں وزیر اعظم نواز شریف کے حکم پر رہا کیا گیا تھا ۔پشاور میں ڈیجیٹل  یوتھ سمٹ کے موقع پر ’’رو عمران رو ‘‘ کا نعرہ لگانے والے کسی نوجوان کی گرفتاری یا دھلائی اور مار کٹائی کے حوالے سے کوئی خبر منظر عام پر نہیں آئی۔  

رو عمران رو کے نعروں کی ویڈیو دیکھیں

مزید :

قومی -