پشاور پولیس کا سٹریٹ کرائمنر کیخلاف کریک ڈاؤن، 25ملزمان گرفتار

پشاور پولیس کا سٹریٹ کرائمنر کیخلاف کریک ڈاؤن، 25ملزمان گرفتار

  

پشاور(کامران علی)کیپٹل سٹی پولیس پشاور نے ا سٹریٹ کرائمز کے خلاف خصوصی کریک ڈاؤن کا آغاز کردیا، پولیس نے گزشتہ پانچ دنوں کے دوران اسٹریٹ کرائمز میں ملوث 8 گروہوں کو بے نقاب کرتے ہوئے 25 ملزمان کو گرفتار کرلیا، گرفتار افراد میں سرقہ شدہ موبائل فونز کے ای ایم آئی ای تبدیل کرنے والے دو ملزمان بھی شامل ہیں، تمام گرفتار ملزمان کے قبضے سے45عدد مسروقہ موبائل فونز،7موٹر سائیکلز، 1 عدد موٹر کار،3 لاکھ روپے سے زائد نقد رقم،راہزنی کے دوران چھینے گئے 17 لاکھ روپے مالیت کے سعودی ریال، 2 عدد لیپ ٹاپ اور مختلف واداتوں میں استعمال ہونے والا اسلحہ بھی برآمد کر لیا گیا ہے، مختلف وارداتوں میں بلا نمبر پلیٹ موٹر سائیکلز کے استعمال کے پیش نظر کریک ڈاون کے دوران 1822 عددبلا نمبر پلیٹ موٹر سائیکلز بھی پولیس تحویل میں لئے گئے ہیں، کریک ڈاون کے دوران اسٹریٹ کرائمز میں ملوث ملزمان کو نکیل ڈالنے کی خاطر نئی حکمت عملی اپنائی گئی تھی، جس کے تحت ہاٹ سپاٹ ایریاز کی نگرانی، پہلے سے معلوم گروہوں کا پیچھا کرنے، اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیمیں تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا تھا، اسی طرح گرفتار ملزمان سے قریبی روابط رکھنے والے افراد کی بھی نگرانی شروع کر دی گئی جس کی وجہ نئی پالیسی کامیاب ہو کر پولیس کو کامیابی ملی، آنے والے دنوں میں اسی طرز کا کریک ڈاون کا ارادہ ہے، ایس ایس پی آپریشن کی میڈیا سے بات چیت تفصیلات کے مطابق پشاور میں عوام کے جان و مال کی حفاظت کو یقینی بنانے اور اسٹریٹ کرائمز پر قابو پانے کی خاطرسی سی پی او قاضی جمیل الرحمان کی خصوصی ہدایت پر ایس ایس پی آپریشن ظہور بابر آفریدی کی نگرانی میں خصوصی کریک ڈاون کیا ہے جس کے دوران اسٹریٹ کرائمز میں ملوث 8 گروہوں کو بے نقاب کرتے ہوئے 25 ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا، کریک ڈاون کے دوران چوری شدہ موبائل فونز کی ای ایم آئی ای نمبر تبدیل کرانے والے افراد کو بھی نشانہ بنایا گیا جس کے دوران حیات آباد پولیس نے کارخانو مارکیٹ میں کارروائی کرتے ہوئے 2 ملزمان ابراہیم اور عابد پسرا ن نصر اللہ ساکنان کینال ٹاون پشاور کو گرفتار کیا ہے جو چوری شدہ اور چھینے گئے موبائل فونز کے ای ایم آئی ای تبدیل کرنے میں ملوث تھے، تھانہ پشتخرہ، گلبرگ، حیات آباد، ٹاون، تاتارا، مچنی گیٹ، گلبہار، بھانہ ماڑی، تھانہ پہاڑی پورہ، چمکنی اور تھانہ خزانہ میں ہونے والے کامیاب کریک ڈاون کے دوران گرفتار ہونے والے ملزمان کے قبضے سے مجموعی طور پر45عدد مسروقہ موبائل فونز،7موٹر سائیکلز، 1 عدد موٹر کار،3 لاکھ روپے سے زائد نقد رقم،راہزنی کے دوران چھینے گئے 17 لاکھ روپے مالیت کے سعودی ریال، 2 عدد لیپ ٹاپ اور مختلف واداتوں میں استعمال ہونے والا اسلحہ بھی برآمد کر لیا گیا ہے، تمام گرفتار افراد کے خلاف مختلف تھانوں میں مقدمات درج کرکے ان سے مزید تفتیش کا سلسلہ جاری ہے اسی طرح راہزنی کی وارداتوں میں بلا نمبر پلیٹ موٹر سائیکل کے استعمال ہونے کے پیش نظر کریک ڈاون کے دوران بلا نمبر پلیٹ موٹر سائیکل سواروں کے خلاف بھی خصوصی مہم چلائی گئی جس کیدوران رورل ڈویژن پولیس نے 788 موٹر سائیکل، سٹی ڈویژن پولیس نے 726 جبکہ کینٹ ڈویژن پولیس نے 308 عددبلا نمبر پلیٹ موٹر سائیکلز کے ساتھ مجموعی طور پر 1822 عددموٹر سائیکلز کو پولیس تحویل میں لیا گیا ہے ایس ایس پی آپریشن نے میڈیا نمائندگان سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جرائم پیشہ افراد کے خلاف نئی پالیسی اور حکمت عملی اپنائی جس کی وجہ سے کامیابی ملی ہے، ایس ایس پی نے مزید کہا کہ خصوصی کریک ڈاون کو کامیاب بنانے اور اسٹریٹ کرائمز میں ملوث افراد کو نکیل ڈالنے کی خاطر نئی حکمت عملی ترتیب دی گئی تھی جس کے تحت شہر کے مختلف ہاٹ سپاٹ کی نشاندہی کرکے ان کی نگرانی شروع کی گئی، اسی طرح موبائل سنیجنگ میں ملوث پہلے سے معلوم گروہوں کا پیچھا بھی شروع کیا گیا جبکہ حالیہ کریک ڈاون کو ہر لحاظ سے مکمل اور کامیاب بنانے کی خاطر اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیمیں بھی تشکیل دی گئیں جنہوں نے گرفتار ملزمان سے پوچھ گچھ کا عمل مکمل کیا، اسی طرح گرفتار ملزمان سے قریبی روابط رکھنے والے افراد کی بھی نگرانی شروع کی گئی جبکہ شہر کے مصروف ترین اور گنجان آباد مقامات پر سادہ کپڑوں میں بھی پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا جس کی وجہ سے نہ صرف جرائم پر قابو پانے میں مدد ملی بلکہ راہزنی میں ملوث ملزمان کو بھی گرفتار کر لیا گیاسی سی پی او قاضی جمیل الرحمان نے واضح کیا ہے کہ عوام کے جان و مال کا تحفظ پولیس کی اولین ترجیح ہے جس کے لئے تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لا جا رہا ہے، انہوں نے مزید کہا ہے کہ اسٹریٹ کریمینلز کے خلاف اپنائی گئی نئی پالیسی کی کامیابی کو مد نظر رکھتے ہوئے آنے والے دنوں میں اسی طرز کے کریک ڈاونز کا سلسلہ جاری رہے گا 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -