بے روزگار وں کو ”آن جاب ٹریننگ“ دینے کاسلسلہ شروع‘ٹیوٹا راولپنڈی

بے روزگار وں کو ”آن جاب ٹریننگ“ دینے کاسلسلہ شروع‘ٹیوٹا راولپنڈی

  

راولپنڈی (این این آئی) وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق بے روزگار نوجوان لڑکوں اور لڑکیوں کو روزگار دینے کیلئے ٹیکنیکل ایجوکیشن اینڈ ووکیشنل ٹریننگ اتھارٹی پنجاب کے تربیتی مراکز نے اپنے اپنے اضلاع میں نئے اور پرانے صنعتی اداروں اور چیمبرز کے تعاون سے متعلقہ صنعتوں کی ضرورت کے مطابق نئے ٹریڈز میں فنی تربیتی کورسز متعارف کرانے اور بے روزگار نوجوانوں کو ان ٹریڈز کی ”آن جاب ٹریننگ“ دینے پر عمل درآمد شروع کر دیا ہے. ٹریننگ کے دوران ہنر سیکھنے والوں کو 3000 روپے تک خرچ دیا جائیگا اور چھ سے ایک سال کی ٹریننگ مکمل ہونے پر انہیں متعلقہ اداروں میں باقاعدہ ملازمت مل جائیگی. ان خیالات کا اظہار ٹیکنیکل ایجوکیشن اینڈ ووکیشنل ٹریننگ اتھارٹی پنجاب کی ڈسٹرکٹ منیجر راولپنڈی ڈویژن فرحت جہاں راجہ نے گورنمنٹ ووکیشنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ برائے خواتین کرتار پورہ راولپنڈی سے مختلف فنی کورسز مکمل کرنے والی بچیوں کو اسناد دینے کی سالانہ تقریب سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کیا. گورنمنٹ ووکیشنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ برائے خواتین کرتار پورہ راولپنڈی سٹی کی پرنسپل صائمہ گل،راولپنڈی چیمبر آف کامرس کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے خواتین کی چئیر پرسن دیا شیخ، کوہ نور ٹیکسٹائل ملز کی نمائندہ سمیعہ زیدی، سپرٹ سکول کی میڈم شگفتہ، ڈسٹرکٹ پلیسمنٹ آفیسر ٹیوٹا عبدالمتین، چیمبر کی ممبران اور مختلف صنعتی اداروں کی نمائندہ خواتین سمیت ہنر سیکھنے والی بچیوں کے والدین بڑی تعداد میں اس موقع پر موجود تھے. پرنسپل گورنمنٹ ووکیشنل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ صائمہ گل نے کہا کہ ہم نے کوہ نور ٹیکسٹائل ملز کے حکام سے بات چیت مکمل کر لی ہے اور ابتدائی طور پر انڈسٹریل سٹچنگ کے ٹریڈ میں افرادی قوت مہیا کرنے کیلئے نیا کورس شروع کر رہے ہیں جو چھ ماہ دورانئے کا ہوگا۔

. اس آن جاب ٹریننگ میں ہنر سیکھنے والی بچیوں اور بچوں کو ماہانہ خرچ 3000 روپے دیا جائیگا اور ٹریننگ مکمل ہونے پر وہ اس ادارے میں باقاعدہ ملازم ہو جائیں گے. انہوں نے کہا کہ جاری فنی تربیتی کورسز میں اس وقت ہم بچیوں کو 2 سالہ ووکیشنل ڈپلومہ، بیوٹیشن، فیشن ڈیزائننگ، ایڈوانس ڈریس میکنگ اینڈ ڈیزائننگ اور کمپیوٹر آپریٹنگ کے ایک سالہ جبکہ ٹیلرنگ، بیوٹیشن، پروفیشنل کوکنگ اور کمپیوٹر کے تین اور چھ ماہ کے شارٹ کورسز کروا رہے ہیں. وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلی پنجاب کے ویژن کے مطابق ایسے فنی تربیتی کورسز متعارف کرانے پر کام ہو رہا ہے جو ہماری انڈسٹری کی ششضرورت ہیں اور جنہیں سیکھ کر بغیر مزید وقت ضائع کئے یہ کورسز سیکھنے والوں کو فوری روزگار مل سکے. انہو ں نے کہا کہ اس حوالے سے ہم سی پیک کے تحت لگنے والی نئی اور پرانی انڈسٹری سے روابط بنا رہے ہیں اور بہت صنعتی ضرورتوں سے ہم آہنگ فنی تربیتی کورسز کا آغاز کر دیا جائیگا. فیبرک پرنٹنگ، آرٹ اینڈ کرافت اور فنی تربیتی کورسز مکمل کرنے والی بچیوں کو اسناد بھی دی گئیں. اس موقع پر کورسز مکمل کرنے والی بچیوں کے ہاتھوں سے بنائی گئی مختلف مصنوعات کی نمائش بھی ہوئی جس میں خواتین نے گہری دلچسپی کا اظہار کیا. نمائش میں رکھے گئے فن پارے اپنی مثال آپ تھے اور ظاہر کر رہے تھے کہ ہماری بچیوں میں بے پناہ صلاحیتیں موجود ہیں جنہیں نکھارنے کیلئے حکومت کی سرپرستی میں تربیتی اداروں میں اضافے اور انہیں وسعت دینے کی ضرورت ہے -

مزید :

کامرس -