بھارتی فوج کی ایل او سی پر بلا اشتعال گولہ باری،خاتون اور کم سن لڑکا شہید

بھارتی فوج کی ایل او سی پر بلا اشتعال گولہ باری،خاتون اور کم سن لڑکا شہید

  

کوٹلی،کھوئی رٹہ،اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن،این این آئی) لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی بلااشتعال گولہ باری کے نتیجے میں ایک خاتون اور 12 سالہ لڑکا شہید ہو گئے،جبکہ ایک خاتون زخمی ہوئی،پاک فوج کی بروقت موثر کارروائی نے دشمن کی توپیں خاموش کروا دیں۔تفصیلات کے مطابق بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پر تتہ پانی سیکٹر میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے شہری آبادی پر شدید گولہ باری کی،شہید خاتون کی شناخت 45 سالہ نسرین اختر جب کہ زخمی خاتون کی شناخت سونیا کے نام سے ہوئی ہے جبکہ کھوئی رٹہ سیکٹر کے گاؤں کس جمیری، کوٹ بھٹیاں، مال، پٹھ ناڑ اور کوٹ کوٹیڑہ میں انڈین آرمی نے بلااشتعال فائرنگ کی اور انڈین آرمی مسلسل سول آبادی کو نشانہ بناتی رہی جس کے نتیجے میں 12سالہ لڑکا محمد شاہد ولد محمد شبیر شدید زخمی ہو گیا۔اسے ابتدائی طبی امداد کے بعد ڈی ایچ کیو کوٹلی ریفر کیا جا رہا تھا راستہ میں زخمیوں کی تالاب نہ لاتے ہوئے شہید ہو گیا۔ پاک آرمی نے دشمن کی اشتعال انگیزی کا موثر جواب دیا جس سے دشمن کی گنیں خاموش ہو گئیں۔ وزیر اعظم آزادحکومت ریاست جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان نے بھارتی فوج کی ایل او سی پر فائرنگ  کے نتیجہ میں شہادتوں پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے اپنے مذمتی بیان میں کہا کہ نہتے شہریوں کو نشانہ بنانا بھارتی افواج کی بزدلی کوظاہرکرتا ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارتی افواج کی فائرنگ اور شیلنگ کی مذمت کرتے ہیں،بین الاقوامی سطح پر بھارتی جارحیت کا نوٹس لیا جانا چاہئے۔

ایل او سی

مزید :

صفحہ اول -