غلط پالیسیوں سے معاشی بحران سونا می بن رہا ہے: زرداری 

غلط پالیسیوں سے معاشی بحران سونا می بن رہا ہے: زرداری 

  

اسلام آباد(آن لائن) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ حکومت کی بنیادی ترجیح صرف سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنانا ہے۔ عمران خان کے پاس عوام کی مشکلات ختم کرنے کا کوئی پروگرام نہیں ہے۔ غلط پالیسیوں سے معاشی بحران سونامی بنتا جا رہا ہے۔ اتوار کے روز عوامی نیشنل پارٹی خیبر پختو نخوا کے صدر ایمل اسفند یار ولی نے سابق صدر آصف زرداری سے ملاقات  کی جس میں ملک کی مجموعی اور خصوصی طور پر خیبر پختو نخوا کی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں حکومت کی کرپشن سمیت عوام کو درپیش مشکلات کے حوالے سے تبادلہ خیال کیاگیا۔  اس موقع پر آصف زرداری کا کہنا تھا کہ حکومت کی بنیادی ترجیح صرف سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنانا ہے۔ عمران خان کے پاس عوام کو مشکلات سے نکالنے کیلئے کوئی پروگرام ہے ہی نہیں ہے۔دوسری طرف آصف زرداری مشاورت کے بغیر (ن)لیگ کو چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی(پی اے سی) تبدیلی کی اجازت دینے پر خورشید شاہ پر برس پڑے اور کہا ہے کہ پارٹی چیئرمین سے مشاورت کیے بغیر ایسے اہم فیصلوں میں بات کرنا پارٹی پالیسی کی خلاف ورزی ہے۔آن لائن کو ذرائع نے بتایا کہ سابق اپوزیشن لیڈر سید خورشید شاہ نے پارٹی کی مشاورت کے بغیر ذاتی حیثیت میں (ن)لیگ کی قیادت سے چیئرمین پی اے سی  کی تبدیلی کے حوالے سے مشاورت کی اور کہا کہ آپ چیئرمین پی اے سی تبدیل کرلیں۔مگر خورشید شاہ نے  اس حوالے سے پارٹی قیادت کو نہیں بتایا جب مسلم لیگ(ن) کی طرف سے چیئرمین پی اے سی تبدیل کردیا گیا تو پیپلزپارٹی نے اس پر تشویش کا اظہار کیا۔آصف علی زرداری خورشید شاہ پر برس پڑے اور خورشید شاہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے پارٹی مشاورت کے بغیر اتنا اہم فیصلہ کیوں کیا اور ذاتی حیثیت میں بات کیوں کی ہے؟ آپ کا یہ اقدام پارٹی پالیسی کے خلاف ہے۔ذرائع کے مطابق اس میٹنگ میں سابق اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ اور سابق سینیٹر رخسانہ بنگش کے درمیان تلخ کلامی بھی ہوئی جس پر میٹنگ میں موجود دیگر رہنماؤں نے دونوں کو خاموش کروادیا لیکن خورشید شاہ پر شدید برہمی کا اظہار کیا کہ آپ کے ن لیگ سے تعلقات ہوں گے لیکن یہ پارٹی پالیسی کے خلاف ہے۔

زرداری 

مزید :

صفحہ اول -