سری لنکامیں اصلاحات کا تسلسل جاری،6سو مسلم وغیر مسلم مبلغین ملک بدر

سری لنکامیں اصلاحات کا تسلسل جاری،6سو مسلم وغیر مسلم مبلغین ملک بدر

  

کولمبو (آن لائن،مانیٹرنگ ڈیسک)سری لنکا نے حالیہ بم دھماکوں کے بعد اصلاحات کے تسلسل میں غیر ملکی مبلغین کے بارے میں سری لنکا کے پولیس حکام نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ وہ تیزی سے اپنا نیٹ ورک بڑھا رہے ہیں،سری لنکا کے وزیر داخلہ نے رپورٹس کی بنیاد پر 2 سو مسلم مبلغین سمیت 6 سو غیر ملکی مبلغین و غیر ملکیوں کو ملک بدر کر دیا ہے اور انہیں جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔ فرانسیسی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق سری لنکا کے وزیر داخلہ وجیرہ ابے وردینا نے کہا کہ مذہبی رہنما قانونی طور پر آئے تھے لیکن حملوں کے بعد سیکیورٹی کریک ڈاؤن سے قبل یہ تمام افراد ویزوں کی مدت سے زیادہ عرصے تک قیام کرتے ہوئے پائے گئے، جس کی وجہ سے ان پر جرمانہ عائد کیا گیا اور ملک بدر کردیا گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ویزا کی مدت سے زیادہ قیام کرنے والوں میں بنگلہ دیش، بھارت، پاکستان اور مالدیپ کے شہری شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’یہاں مذہبی انسٹی ٹیوٹ ہیں جہاں دہائیوں سے غیر ملکی مبلغ آرہے ہیں‘۔ہمیں ان سے کوئی مسئلہ نہیں ہے لیکن یہاں کچھ ایسے ہیں جو یہاں تیزی سے پھیل گئے، ہم ان پر زیادہ توجہ دیں گے۔ ملک بھر میں دھماکا خیز مواد اور انتہا پسندوں کو ڈھونڈنے کے لیے گھر گھر تلاشی جاری ہے۔

سری لنکا

مزید :

صفحہ اول -