عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی، عوام ریلیف سے محروم، اپوزیشن کی تنقید

عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی، عوام ریلیف سے محروم، اپوزیشن کی تنقید

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی کے ریلیف سے عوام محروم، عالمی سطح پر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم، موجودہ حکومت کے ساڑھے آٹھ ماہ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 13 روپے تک اضافہ ہوا۔عالمی سطح پر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم، پاکستان میں مہنگی ہوگئیں۔ اگست 2018ء سے مئی 2019ء تک پیٹرول 13 روپے فی لیٹر مہنگا ہوا۔اگست 2018ء سے مئی 2019ء تک ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 9 روپے 38 پیسے فی کا اضافہ ہوا۔ ساڑھے آٹھ ماہ میں لائٹ ڈیزل 11 روپے 57 پیسے فی لٹر مہنگا ہوا۔اگست 2018 سے مئی 2019ء تک مٹی کا تیل 12 روپے 81 پیسے فی لٹر مہنگا ہوا۔ پٹرول کی قیمت 95 روپے 24 پیسے سے بڑھ کر 108 روپے 31 پیسے ہوگئی۔ ہائی سپیڈ ڈیزل 112 روپے 94 پیسے سے بڑھ کر 122 روپے 32 پیسے فی لٹر تک پہنچ گیا ہے۔ لائٹ ڈیزل آئل کی فی لٹر قیمت 75 روپے 37 پیسے سے بڑھ کر 86 روپے 94 پیسے ہو چکی ہے۔ مٹی کا تیل 83 روپے 96 پیسے سے بڑھ کر 96 روپے 77 پیسے فی لٹر کا ہو گیا ہے۔اگست 2018 کی نسبت مئی 2018ء  میں خام تیل کی قیمت میں ڈیڑھ ڈالر کی کمی ہوئی۔ اگست 2018ء  میں عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت 72 اعشاریہ 53 ڈالر فی بیرل تھی۔مئی 2019ء میں عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت 70 اعشاریہ 85 ڈالر فی بیرل ہے۔ ساڑھے 8 ماہ میں پیٹرول پر سیلز ٹیکس ساڑھے 9 سے بڑھا کر 12 فیصد کر دیا گیا۔موجودہ دور حکومت میں مٹی کے تیل پر سیلز ٹیکس 6 سے بڑھا کر 17 فیصد کر دیا گیا۔ ساڑھے 8 ماہ میں لائٹ ڈیزل پر سیلز ٹیکس ایک سے بڑھا کر 17 فیصد کر دیا گیا۔ ہائی سپیڈ ڈیزل پر سیلز ٹیکس 22 فیصد سے کم کر کے 17 فیصد کر دیا گیا ہے۔

عالمی منڈی 

  نارووال،اسلام آباد، کوئٹہ(نمائندہ خصوصی،نیوزایجنسیاں)قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا ہے کہ رمضان سے قبل پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ظلم اوربے حسی کی انتہا ہے، حکومت اپنی نااہلی اور نالائقی کا بوجھ عوام پر ڈال رہی ہے۔ ایک بیان میں قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے کہا کہ حکومت اپنی نااہلی اور نالائقی کا بوجھ عوام پرڈال رہی ہے۔بلوچستان اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر ملک سکندر ایڈوکیٹ نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتو ں میں اضافہ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ حکمران بیرونی قرضوں کا بوجھ ٹیکسوں اور عوام پر ڈالنے سے باز رہیں حکومت عوام کو ریلیف دینے کے بجائے ان کی مشکلات میں اضافہ سے گریز کرے ماہ صیام سے قبل پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھا کر حکومت نے عوام دشمنی کا ثبوت دے دیا ہے اور ایسا  لگ رہا ہے کہ یہاں پر حکومت نہیں بلکہ آئی ایم ایف کی اجارا داری ہے اپنے جاری کردہ بیان  میں انہوں نے کہاہے کہ انتخابات سے قبل تبدیلی کا نعرہ لگانے والوں نے حقیقی معنوں میں تبدیلی لاکر دی اوراب عوام سکون سے زندگی گزارنے پر مجبور ہیں انتخابا ت سے قبل جو وعدے کئے گئے تھے ان وعدوں میں حکومت مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے۔احسن اقبال نے کہا کہ پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ سے پوری معیشت کو آگ لگ جاتی ہے، ملک میں مہنگائی کا ایسا سونامی آئے گا کہ غریب لوگ خودکشیوں پر مجبور ہو جائیں گے۔مسلم لیگ (ن) پنجاب کی سیکرٹری اطلاعات عظمیٰ بخاری نے کہا کہ حکومت نے9 روپے 31 پیسے پٹرول کی قیمت میں اضافہ کرکے قوم کورمضان کی سلامی دی۔پیپلزپارٹی کے رہنما لطیف کھوسہ نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف 9 ماہ میں مہنگائی کا طوفان لے آئی، حکومت مہنگائی تو ختم نہ کرسکی،غریبوں کو ختم کرنے میں لگی ہے۔ لطیف کھوسہ نے کہا کہ تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہر چیز کی قیمت میں اضافے کا سبب بنتا ہے۔ تحریک انصاف نے حسب وعدہ عوام کی چیخیں نکلوانا شروع کر دی ہیں۔امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے اپنے ردعمل میں کہا کہ حکومت پیٹرول کی قیمت میں اضافہ فوری واپس لے، اس سے مہنگائی کا سونامی سب کچھ بہالے جائے گا، حکمران ہوش کے ناخن لیں، ایسا نہ ہو کہ مہنگائی کے ستائے لوگ رمضان میں ہی سڑکوں پر آجائیں۔

اپوزیشن 

 لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے پر اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے شدید تنقید کی جارہی ہے جب کہ وزیراعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے قیمتوں میں اضافے کا دفاع کیا ہے۔لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ عوام پر پیٹرول بم جان بوجھ نہیں نہیں گرایا، عالمی سطح پر تیل کی قیمت میں اضافے کی وجہ سے یہ فیصلہ کیا۔انہوں نے کہا کہ عالمی مارکیٹ میں قیمتیں بڑھنے کی وجہ سے اس کا بوجھ حکومت اور عوام کو مل کر برداشت کرنا پڑے گا۔معاون خصوصی کا مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کم از کم نہیں چاہیں گے کہ وہ عوام کی مشکلات میں اضافہ کریں۔

فردوس عاشق

مزید :

صفحہ اول -