رمضان میں 1000سے زائد سٹی وارڈنز ٹریفک پولیس کو مدد فراہم کریں گے: میئر کراچی 

رمضان میں 1000سے زائد سٹی وارڈنز ٹریفک پولیس کو مدد فراہم کریں گے: میئر کراچی 

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ بلدیہ عظمی کراچی نے رمضان المبارک کے دوران شہریوں کو سہولیات پہنچانے اور ان کو مدد فراہم کرنے کے لئے 1000 سے زائد سٹی وارڈنز کو شہر کے 45 چوراہوں اور اور مصروف شاہراہوں پر تعینات کیا ہے جو ٹریفک کنٹرول کرنے میں ٹریفک پولیس کو مدد فراہم کریں گے جبکہ 15 مقامات پر کیمپ لگائے جا رہے ہیں جو 24 گھنٹے کام کریں گے۔ان کیمپوں میں وافر مقدار میں پانی سمیت ابتدائی طبی امداد کا انتظام بھی ہو گا تاکہ شدید گرمی یا ہیٹ اسٹروک کی صورت میں کسی شہری کو ابتدائی طبی امداد یا پانی کی ضرورت پڑے تو فوری طور پر مہیا کیا جا سکے جبکہ ہر کیمپ میں 100 افراد کی افطاری کا بھی انتظام ہو گا جس میں ضرورت کے مطابق بتدریج اضافہ کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ شہر کی مصروف ترین سڑکوں چوراہوں، شاپنگ سینٹرز، مساجد اور تراویح کے مقامات پر وارڈنز تعینات کئے جائیں گے جو شہریوں کو سہولت فراہم کریں گے۔تاہم ضرورت اس بات کی ہے کہ بنیادی سہولتوں پر معمور ادارے اپنا کردار اور ذمہ داریوں کی انجام دہی ایمانداری سے ادا کریں۔خصوصا، واٹر بورڈ، سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ اور کے الیکٹرک کی ذمہ داریاں بہت زیادہ ہیں اور شہری ان کی سروسز سے براہ راست متاثر ہو رہے ہیں۔ شہریوں کو پانی اور بجلی کی بلا تعطل فراہمی یقینی بنائی جائے۔ محلے، سڑکوں اور گلیوں سے کچرے کے ڈھیروں کو اٹھایا جائے۔ کچرے کے ڈھیروں کی بدبو سے بیماریوں کے علاوہ اب شہریوں کو عبادت گاہوں تک جانا مشکل ہو گیا ہے۔ حکومت سندھ سے کہوں گا کہ رمضان کے مقدس مہینے میں ہی شہریوں پر کچھ رحم کیا جائے شہریوں کو سیوریج اور کچرے کے عذاب سے جان چھڑائیں اور پینے کا پانی مہیا کریں روزہ داروں کو افطاری کے بعد پانی بھی میسر نہیں ہو گا تو اس کی کیا حالت ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ بلدیہ عظمی کراچی کی جو ذمہ داری ہے یا منتخب بلدیاتی نمائندوں کے جو اختیارات ہیں اس میں ہم نے اپنی ذمہ داری پوری کر رہے ہیں سڑکوں پر ٹریفک کی روانی برقرار رکھنے کے لئے تجاوزات ہٹائی گئی ہیں یہ کام ابھی بھی جاری ہے اور رمضان المبارک میں بھی جاری رہے گا جبکہ چارجڈ پارکنگ کے نظام کو موثر اور متحرک بنایا گیا ہے، کار ڈیلرز اور شو رومز مالکان کو پابند کیا گیا ہے کہ فٹ پاتھ اور سڑکوں پر گاڑیاں کھڑی نہ کریں، رمضان کے دوران ٹریفک پولیس اور سٹی وارڈنز زیادہ تعداد میں سڑکوں پر نظر آئیں تاکہ لوگوں میں اچھا پیغام جائے اگر اس ایک ماہ کے دوران ایمانداری سے عوام کو سہولت فراہم کریں تو یہ شہر کی بڑی خدمت ہوگی، میئر کراچی نے متعلقہ افسران کو ہدایت کی کہ شہر کے مختلف اضلاع میں ایسے مقامات انتخاب کیا گیا ہے جہاں رمضان کے دوران ٹریفک جام رہنے کی شکایات آتی ہیں، خاص طور پر کاروباری مراکز کے اطراف خصوصی توجہ دی جائے اور کسی بھی قسم کی تجاوزات سڑکوں کے گرد قائم نہ ہونے دی جائیں، وارڈنز ٹریفک پولیس کے اشتراک سے رمضان کے مہینے میں طارق روڈ، صدر، حیدری، لیاقت آباد، واٹر پمپ، کریم آباد، سخی حسن اور دیگر مقامات پر ٹریفک کی روانی برقرار رکھنے کے لئے ہر ممکن اقدامات کریں، انہوں نے ہدایت کی کہ نمازیوں کی سہولت کے لئے مساجد اور تراویح کے مقامات پر اسٹریٹ لائٹس روشن رہنی چاہئیں، متعلقہ محکمہ اس سلسلے میں فوری اقدامات کرے، میئر کراچی نے کہا کہ اس وقت جبکہ شہر کی کئی مرکزی سڑکیں ترقیاتی کاموں کے باعث بند ہیں وہاں ٹریفک کی روانی کی صورت حال انتہائی تشویشناک ہے اس لئے ان مقامات پر بے انتہا توجہ کی ضرورت ہے لہٰذا تمام اضلاع اپنے اپنے علاقے کی ضروریات سے آگاہ کریں تاکہ رمضان کے دوران وہاں سٹی وارڈنز اور دیگر عملے کی تعیناتی کی جاسکے، رمضان المبارک میں چارجڈ پارکنگ کے شعبے کو زیادہ فعال کرنے کی ضرورت ہے تاکہ غلط پارکنگ کی وجہ سے ٹریفک جام کے مسائل پیدا نہ ہوں،  غلط پارکنگ کی وجہ سے پیدا ہونے والے مسائل سے شہریوں کو بچایا جائے،انہو ں نے شہریوں سے اپیل کی کہ سٹی وارڈنز سے تعاون کریں، ٹریفک قوانین کی پابندی کریں اور غلط مقامات پر پارکنگ سے گریز کریں، انہوں نے کہا کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی کی پوری کوشش ہے کہ رمضان المبارک میں شہریوں کو بہتر سہولیات فراہم کی جائیں ہماری جو ذمہ داریاں یا اختیارات ہیں اس میں ہم شہریوں کو مایوس نہیں کریں گے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -