ریکوڈک کیس ہرجانے کا سارا بوجھ بلوچستان پر آئے گا: جام کمال 

ریکوڈک کیس ہرجانے کا سارا بوجھ بلوچستان پر آئے گا: جام کمال 

  

کو ئٹہ(آن لائن)وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے ریکوڈک کا کیس عالمی سطح پر چل رہا ہے اس کا ایک فیصلہ ہمارے خلاف آچکا ہے لیکن اب تک ہرجانے کی رقم طے نہیں ہوئی، قوی امکان ہے کہ ہم پر اربوں ڈالر کا جرمانہ عائد کیا جائیگا،یہ رقم صوبے نے ادا کرنی ہے اور اسکا سارا بوجھ حکومت بلوچستان پر آئے گا۔یہ بات انہوں نے میڈیا کے ایک گروپ سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، جام کمال خان نے کہا کہ صوبے میں پہلی دفعہ منرل سیکٹر پر کام کر رہے ہیں ریکوڈک وہ واحد منصوبہ ہے جو کہ فیزبل اور گرا ؤ نڈ پر عملی طور پر موجود ہے، باقی منصوبوں کے حوالے سے باتیں ہیں لیکن ان کے حوالے سے کوئی ٹھوس اور جامع معلومات نہیں ہیں۔وزیراعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ ہمیں اسمبلی اور اسٹیک ہولڈرز کو بتانا ہے کہ ہماری مالی پوزیشن ٹھیک نہیں ہے اسی طر ح ملکی سطح پر بھی اقتصادی صورتحال بہتر نہیں ہے اس صورتحال میں ہمیں اندورنی سطح پر کوئی بیل آ  ؤٹ پیکج ملنے کے امکانات نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ پی ایس ڈی پی کی کتاب بنانا آسان جبکہ اس پر اصل کام عمل درآمد ہے، ہماری حکومت جون تک32 ارب روپے کی لاگت سے 450اسکیمیں جو گزشتہ حکومتوں کی شروع کردہ ہیں کو مکمل کرے گی، یہ وہ منصوبے ہیں جنہیں ہم نے شروع نہیں کیا یہ 15سال سے ادھوری اسکیمیں تھیں، صوبے کے کالج، سکول، سڑکیں، ہسپتال ادھورے تھے انہیں پورا کر رہے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی اتحادی جماعت ہے ان کے ساتھ تعلقات بہتر ہیں، وزیر اعظم کی مدد سے سی پیک کے مغربی روٹ پر کام کر رہے ہیں اور یہ دو رویہ بنے گا، صوبے میں کارڈیک اور کینسر کا ہسپتال بنا رہے ہیں۔

جام کمال  

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -