سرائیکی کانفرنس ‘ سرائیکی اجرک متعارف کرانے پر ظہور دھریجہ کی تاج پوشی

  سرائیکی کانفرنس ‘ سرائیکی اجرک متعارف کرانے پر ظہور دھریجہ کی تاج پوشی

  

ملتان ( سپیشل رپورٹر)بجٹ سے پہلے غریبوں پر پٹرول بم گرانا بہت بڑا جرم ہے۔ حکمران غربت کی بجائے غریب کو مارنے پر کمر بستہ ہیں۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستان قومی(بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

 کونسل کے صدر ظہور دھریجہ نے سرائیکی حقوق کونسل اور سرائیکی عوامی اتحاد کی طرف سے منعقد کی گئی سرائیکی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ دیوانہ بلوچ اور فیصل کھرل تقریب کے میزبان تھے جبکہ پاکستان سرائیکی پارٹی کے رہنما شفقت بخاری ، سرائیکی قومی اتحاد کے رہنما مخدوم اکبر شاہ، ہمدرد سرائیکی پارٹی کے چیئرمین ملک رحمت اللہ اور سرائیکی ایکشن کمیٹی کے چیئرمین راشد عزیز بھٹہ نے کانفرنس سے خطاب کیا۔ اس موقع پر سرائیکی اجرک متعارف کرانے پر ظہور دھریجہ کی تاج پوشی کی گئی۔ کانفرنس میں شاعروں، ادیبوں اور فنکاروں کو سفیر لشاری ایوارڈ دیا گیا جبکہ کانفرنس کے شرکاءنے سانحہ ہیڈ راجکاں پر اپنی نشستوں سے کھڑے ہو کر متاثرین سے یکجہتی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر ہیڈ راجکاں سانحہ کی مضروبہ حضوراں بی بی اور نسیم بی بی بھی موجود تھے۔ ظہور دھریجہ نے کہا کہ سرائیکی وسیب کے لوگوں سے چولستان میں زمینیں چھینی جا رہی ہیں غیر محسوس حملہ آوری کے ذریعے وسیب کے لوگوں کو اپنے گھروں سے بے دخل کیا جا رہا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ پچاس لاکھ آدمی کراچی منتقل ہو چکا ہے اور خواتین سیٹھوں کے گھروں میں برتن مانجنے پر مجور ہیں ماسی کے مقدس رشتے کو نوکرانی کے معنوں میں تبدیل کر دیا گیا ہے۔ بلوچستان میں وسیب کے لوگ پنجاب کے نام سے نفرت کا شکار ہو رہے ہیں جبکہ سرائیکیوں پر پنجاب بھی ظلم کر رہا ہے۔ جب تک ہمارا صوبہ سرائیکستان نہیں بنے گا مسئلے حل نہیں ہوں گے۔ سبزہ زار کلب جوہر ٹاﺅن کراچی میں منعقدہ ہونے والی کانفرنس سے فاروق کھرل، آصف دھریجہ، محمد علی خان جاوید، غفور ملک و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ کانفرنس میں سینکڑوں افراد نے شرکت کی۔اس موقع پر مہمانوں کو سرائیکی اجرکیں پہنائی گئیں اور فنکاروں نے سرائیکی اجرک گیت اور ترانے پیش کئے۔ معروف انقلابی شعراءخادم حسین خان مگسی، عبدالستار زائر ود یگر نے اپنا کلام سنایا۔

تاج پوشی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -