عہدے کی معیاد پوری، انضمام کی ورلڈ کپ کے بعد چھٹی امکان 

عہدے کی معیاد پوری، انضمام کی ورلڈ کپ کے بعد چھٹی امکان 

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر) پاکستان کرکٹ بورڈکی سلیکشن کمیٹی اور اس کے چیئرمین انضمام الحق کی جانب سے منتخب کی گئی ورلڈ کپ کے لیے ٹیم ان کا آخری اسائمنٹ تھا جس کے بعد انہیں اس عہدے سے ہٹا دیا جائے گا۔باوثوق ذرائع نے بتایا کہ سابق کپتان کو پی سی بی کی اعلی انتظامیہ کی جانب سے ایک اجلاس کے دوران کہا گیا ہے کہ ان کا وقت پورا ہوگیا۔پی سی بی کی جانب سے انضمام الحق کو یہ آپشن دیا گیا ہے کہ وہ پی سی بی میں دوسرا عہدہ لے کر اپنی ملازمت جاری رکھ سکتے ہیں۔تاہم چیف سلیکٹر نے پی سی بی کی اس پیشکش کا اب تک کوئی جواب نہیں دیا۔واضح رہے کہ انضمام الحق کو 2016 میں سابق چیئرمین پی سی بی شہریار خان کے دور میں چیف سلیکٹر مقرر کیا گیا تھا جبکہ وہ نجم سیٹھی کے دور میں بھی اپنی ذمہ داریاں نبھاتے رہے۔یہاں یہ بات قابلِ غور ہے کہ احسان مانی کے چیئرمین بننے کے بعد سے لے کر اب تک پاکستان کرکٹ ٹیم کی کارکردگی بالخصوص ایک روزہ کرکٹ میں خراب رہی ہے۔پاکستان ٹیم کو ایشیا کپ میں بدترین شکست کا سامنا کرنا پڑا جہاں وہ فائنل کے لیے بھی کوالیفائی نہیں کرسکی اور بھارت کے ساتھ ہونے والے اپنے دونوں میچز ہارگئی۔پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے بعد آسٹریلیا کے خلاف ہونے والی 5 میچوں کی سیریز کے دوران انضمام اور سلیکشن کمیٹی نے ٹیم کے 5 اہم کھلاڑیوں کو آرام دینے کا فیصلہ کیا تھا جو ان کے لیے ڈرانا خواب ثابت ہوا اور ٹیم کینگروز سے وائٹ واش ہوگئی۔واضح رہے کہ انضمام اور سلیکشن کمیٹی کا پی سی بی کے ساتھ معاہدہ 30 اپریل کو ختم ہونا تھا تاہم انگلینڈ میں ہونے والے ورلڈ کپ کی وجہ سے اس معاہدے میں 31جولائی تک کی توسیع کردی گئی تھی۔تاہم انضمام الحق کی بطور چیف سلیکٹر ملازمت میں توسیع کے امکانات بہت ہی کم ہیں۔اس کے علاوہ  علم میں آیا ہے کہ قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر کو بھی انگلینڈ میں ہونے والے ورلڈ کپ کے بعد عہدے سے فارغ کردیا جائے گا۔ 

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -