چینی مردوں نے میرج بیورو کے ساتھ مل کر غریب پاکستانی خاندان کی نو عمر لڑکیوں سے پانچ شادیاں رچا لیں، ہنگامہ برپا ہوگیا

چینی مردوں نے میرج بیورو کے ساتھ مل کر غریب پاکستانی خاندان کی نو عمر لڑکیوں ...
چینی مردوں نے میرج بیورو کے ساتھ مل کر غریب پاکستانی خاندان کی نو عمر لڑکیوں سے پانچ شادیاں رچا لیں، ہنگامہ برپا ہوگیا

  

منڈی بہاؤالدین (ویب ڈیسک)  چینی مردوں نے لاہور کے میرج بیورو کے ساتھ مل کر منڈی بہاوالدین میں نوعمر غریب خاندان کی لڑکیوں سے پانچ شادیاں رچا لیں، ڈی پی او ناصر سیال نے معاملہ کا نوٹس لے لیا اور ایک چینی شہری کی سفری دستاویزات تحویل میں لے کر تحقیقات شروع کر دیں، میرج بیورو کی خاتون نے تفصیلات دینے سے انکار کر دیا۔

دنیا نیوز کے مطابق منڈی بہاءالدین ضلع میں چینی باشندوں کی جانب سے پانچ انتہائی غریب خاندانوں سے تعلق رکھنے والی نوعمر لڑکیوں کے ساتھ خود کو مسلمان ہونے کا سرٹیفیکیٹ دکھا کر شادی کرنے کا معاملہ سامنے آیا ،چائینز افراد کی جانب سے لاہور کی میرج بیورو کے ذریعے یہ شادیاں کی گئی ہیں، شادیاں کرنے والوں میں دو لڑکیوں کا تعلق پھالیہ سٹی اور تین کا تعلق منڈی بہاوالدین شہر سے ہے۔گذشتہ رات پولیس اور حساس اداروں کی جانب سے محلہ گوڑھا میں کارروائی کی گئی جہاں ایک چائینز کی جانب سے دس روز قبل اپنا مذہب تبدیل کرکے ایک آٹھویں پاس انتہائی غریب لڑکی جو کہ آٹھ بہنوں اور دو چھوٹے بھائیوں میں دوسرے نمبر پر ہے، سے شادی کرنے کے معاملے کی تحقیقات شروع کر دیں اور چائینز کی سفری دستاویزات تحویل میں لیکر انکے گھر پر پولیس اہلکار تعینات کر دیئے ہیں، چائینز کے ساتھ لاہور کے ایک میرج بیورو کی خاتون بھی ہمراہ ہے۔

رپورٹ کے مطابق  ڈی پی او ناصر سیال نے کہا ہے اس معاملے کو قانونی پہلووں سے دیکھ رہے ہیں، یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ چائنیز مردوں نے پوش خواتین کی بجائے انتہائی غریب خاندان سے تعلق رکھنے والی لڑکیوں کو شادی کیلئے منتخب کیا ہے اور میرج بیورو کی جانب سے اب تک ہونے والی پانچ شادیوں کا انعقاد لاہور میں کیا گیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -