بلاول ملکی معاشی معاملات کی سنگینی سے ناواقف، معاشی خودمختاری پر ڈاکہ ڈالنے والے بلاول کے گھر میں موجود ہیں:عثمان ڈار

بلاول ملکی معاشی معاملات کی سنگینی سے ناواقف، معاشی خودمختاری پر ڈاکہ ڈالنے ...
بلاول ملکی معاشی معاملات کی سنگینی سے ناواقف، معاشی خودمختاری پر ڈاکہ ڈالنے والے بلاول کے گھر میں موجود ہیں:عثمان ڈار

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے امور نوجوانان عثمان ڈار نے کہا ہے کہ بلاول ملکی معاشی معاملات کی سنگینی سے ناواقف ہیں ، معاشی خودمختاری پر ڈاکہ  ڈالنے والے بلاول کے گھر میں موجود  ہیں ، بلاول والد سے لوٹی دولت قومی خزانے میں جمع کرائیں۔

نجی ٹی وی کے مطابق پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ بلاول نے تو تباہی کے اصل ذمہ داروں کو جیل میں جا کر جھپیاں ڈالیں ،وزیراعظم عمران خان ورثے میں ملی تباہ حال معیشت ٹھیک کر رہے ہیں ۔عثمان ڈار نے کہا کہ اداروں کے سربراہان کی تبدیلی وتقرری وزیراعظم کی صوابدید ہے ، پی پی دور میں آئی ایم ایف سے لیا گیا قرض کہاں گیا؟ سب جانتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر زرداری حکومت نے پیسہ عوام پر خرچ کیا ہوتا تو آج جعلی اکاؤنٹس سے برآمد نہ ہورہا ہوتا،بلاول معاشی تجزیہ کار بننے سے پہلے حقائق سے آگاہی حاصل کریں ، قوم کو بتائیں پاکستان تیس ہزار ارب روپے کا مقروض کیسے ہوا؟۔

واضح رہے کہ بلاول بھٹو زرداری نے گورنر سٹیٹ بینک کی تبدیلی کیخلاف بھرپور مہم چلانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملکی معاشی خودمختاری پر سمجھوتہ کیا جا رہا ہے،کیا ہمارا آئین اس بات کی اجازت دیتا ہے کہ مصر میں بیٹھے آئی ایم ایف کے ملازم کو سٹیٹ بینک کا گورنر بنادیا جائے ؟ صرف پاکستان کو ہی نہیں آئی ایم ایف کو بھی پاکستان کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر خزانہ، چیئرمین ایف بی آر اور گورنر سٹیٹ بینک کی اچانک تبدیلیاں سنگین مسئلہ ہے، حکومت میں قائدانہ صلاحیت نہیں، لگ رہا ہے کہ ہم معاشی خودمختاری پر سمجھوتا کررہے ہیں،کیا اب آئی ایم ایف  ہمارے وزیر خزانہ، چیئرمین ایف بی آر اور گورنر سٹیٹ بینک کو تعینات کرے گا؟ آئی ایم ایف اگر ملک چلائے گا تو وہ عوام نہیں بلکہ اپنے مفاد کے لئے چلائے گا، اس طرح کا نظام نہیں چلے گا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -