خاتون کوہراساں کرنیکا الزام پولیس اہلکارکیخلاف تحقیقات شروع

خاتون کوہراساں کرنیکا الزام پولیس اہلکارکیخلاف تحقیقات شروع

  

ملتان (نیوز رپورٹر)ملتان میں پولیس اہلکار کی جانب سے خاتون کو ہراساں کرنے کا سکینڈل منظر عام پر آیا ہے۔خاتون نے پولیس افسران کو تحریری طور پر ہراساں کئے جانے بارے آگاہ کر دیا ہے جبکہ پولیس اہلکار کے(بقیہ نمبر22صفحہ6پر)

مطابق اسے بلیک میل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے پولیس اہلکار نے خاتون کے خلاف تھانہ میں درخواست بھی دے دی۔تفصیل کے مطابق آمنہ بی بی نامی خاتون نے تھانہ سیتل ما ڑی کے محرر عمران الزام کیا کہ اس نے اسے حراساں کیا۔خاتون نے اپنی شکایت میں موقف اختیار کیا کہ اس نے اپنے کسی زاتی مسئلہ میں 15 پر کال کی تھی جہاں سے اسکا نمبر عمران کے پاس گیا اور اس نے واٹس ایپ پر اسے نازیبا پیغامات بھیجے اور اب اسے نمبر تبدیل کرکے تنگ کررہا ہے۔پولیس حکام کی جانب سے خاتون کی درخواست پر انکوائری شروع کر دی گئی ہے ابتدائی تفتیش میں عمران اور آمنہ بی نی کا موبائل ڈیٹا نکلوایا گیا ہے جس میں خاتون کی جانب سے لگائے جانے والے الزامات کی تصدیق نہ ہوسکی ہے عمران کی جانب سے کوئی نازیبا پیغام سامنے نہ آیا ہے۔ایس ایچ او محمد اشرف کے مطابق مزید تفتیش جاری ہے۔

تحقیقات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -