لڑکیوں کو بلیک میل کرنے والا گرفتار، سائبر کرائم ونگ کے اہلکاروں نے ملزم پکڑنے کیلئے کیا طریقہ اپنایا؟ جان کر آپ بھی داد دیں گے

لڑکیوں کو بلیک میل کرنے والا گرفتار، سائبر کرائم ونگ کے اہلکاروں نے ملزم ...
لڑکیوں کو بلیک میل کرنے والا گرفتار، سائبر کرائم ونگ کے اہلکاروں نے ملزم پکڑنے کیلئے کیا طریقہ اپنایا؟ جان کر آپ بھی داد دیں گے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایف آئی اے کے سائبر کرائم ونگ نے لڑکیوں کو بلیک میل کرنے والے ملزم کو لڑکی بن کر 24 گھنٹے میں ہی گرفتار کرلیا۔

ترجمان ایف آئی اے کے مطابق ایک متاثرہ لڑکی نے ڈائریکٹر سائبر کرائم ونگ وقار چوہان سے رابطہ کیا۔ لڑکی نے بتایا کہ ملزم محمود شرف الدین اس کی تصاویر کی تشہیر کی دھمکیاں دیتا اور مستقل پیسوں کی ڈیمانڈ کرتا ہے، ملزم نے تصاویر تلف کرنے کے بہانے لڑکی کو ملاقات کیلئے بھی اکسایا۔

متاثرہ لڑکی کی شکایت پر ایڈیشنل ڈائریکٹر عبدالرؤف کی نگرانی میں ایس ایچ او حمیرا سلیم اور دیگر افسران پر مشتمل ٹیم تشکیل دی گئی جس نے جدید ٹیکنالوجی اور دیگر ذرائع سے ملزم کو 24 گھنٹے کے اندر ٹریس کرکے حراست میں لے لیا۔

دوران تفتیش انکشاف ہوا کہ ملزم لڑکیوں کے نام کی جعلی پروفائلز بنا کر دیگر کئی خواتین کو بھی ہراساں کرنے میں ملوث تھا۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر سائبر کرائم ونگ آصف اقبال چوہدری کے مطابق بلیک میلنگ ایک ایسی دلدل ہے جس سے باہر نکلنا تقریبا ناممکن ہوتا ہے۔خواتین بلیک میل ہونے کی بجائے سائبر کرائم ونگ سے رابطہ کریں انشاءاللہ وہ نارمل زندگی جئیں گی۔ بلیک میلرز ناسور ہیں جن کا انجام جیل اور بدنامی کی زندگی ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -